سعود عثمانی کچھ بھی ہو خوئے یار سے ہٹنے کی خُو نہ ہو ۔ سعود عثمانی

چوہدری لیاقت علی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 24, 2015

  1. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    کچھ بھی ہو خوئے یار سے ہٹنے کی خُو نہ ہو
    نعت و سلام و مدح میں یارب غلُو نہ ہو

    مضمون آفرینی و نکتہ سرائی میں
    ایسا نہ ہو کہ چہرہء حق سرخرو نہ ہو

    میری سپہ مجھی پہ نہ تلوار سونت لے
    میرا لکھا ہوا کہیں میرا عدو نہ ہو

    بیکار ہی نہ جائیں سخن کی ریاضتیں
    جیسے کوئی نماز پڑھے اور وضو نہ ہو

    جیسے کسی نے اپنی عبادت کے زعم میں
    نیت تو باندھ رکھی ہو' خود قبلہ رُو نہ ہو

    ایسا نہ ہو کہ صدق و محبت کے نام پر
    جو کچھ لکھیں وہ کذب و ریا کا نمونہ ہو

    کوئی زباں تو بات کرے ایسے عشق کی
    جو داستاں طراز نہ ہو ' قصہ جُو نہ ہو

    اے صدق ِ عشق زاد ! مرے سچ کی لاج رکھ
    یہ آب ِ آئنہ کہیں بے آبرو نہ ہو

    اے عشق ِ سینہ سوز! مرے دل سے دل ملا
    اور یوں کہ بس کلام ہو اور گفتگو نہ ہو

    تجھ پر اگر میں شعر لکھوں تجھ کو بھول کر
    تا عمر میری آنکھ مرے روبہ رُو نہ ہو

    میں خاک ڈالتا ہوں زر و سیم ِ حرف پر
    اے یار ِ بے مثال اگر ان میں تُو نہ ہو

    بس عشق ِ اہل عشق میں آباد رہ سعود
    دنیا کی داد چاہے ترے چار سُو نہ ہو

    (سعود عثمانی )
     
    • زبردست زبردست × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. حمیرا عدنان

    حمیرا عدنان مدیر

    مراسلے:
    6,682
    جھنڈا:
    Kuwait
    موڈ:
    Angelic
    بہت ہی عمدہ چوہدری صاحب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. ادب دوست

    ادب دوست معطل

    مراسلے:
    3,429
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    کیا کہنے ،
    بہت خوب ، بہت خوب انتخاب ۔
    شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر