نوشی گیلانی کوئی مجھ کو مرا بھرپور سراپا لادے

نظام الدین نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 7, 2015

  1. نظام الدین

    نظام الدین محفلین

    مراسلے:
    1,005
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    کوئی مجھ کو مرا بھرپور سراپا لادے

    مرے بازو، مری آنکھیں، مرا چہرہ لادے

    ایسا دریا جو کسی اور سمندر میں گرے

    اس سے بہتر ہے کہ مجھ کو مرا صحرا لادے

    کچھ نہیں چاہئے تجھ سے اے مری عمرِ رواں

    مرا بچپن، مرے جگنو، مری گڑیا لادے

    جس کی آنکھیں مجھے اندر سے بھی پڑھ سکتی ہوں

    کوئی چہرہ تو مرے شہر میں ایسا لادے

    کشتی جاں تو بھنور میں ہے کئی برسوں سے

    اے خدا اب تو ڈبودے یا کنارا لادے

    (نوشی گیلانی)​
     
  2. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بڈھے وارے "بھرپور سراپا" کوئی کتھوں لا دے۔۔۔ ایسے اشعار پر پنجابی میں کہتے ہیں "بڈھی گھوڑی لال لگام"
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  3. قربان

    قربان محفلین

    مراسلے:
    75
    غالبا یہ غزل پروین شاکر صاحبہ کی ہے
     
  4. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    جی نہیں یہ نوشی صاحبہ ہی کے نام سے منسوب ہے۔ اب پتہ نہیں یہ ان کی اپنی ہے یا منور جمیل کی۔۔۔۔۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر