کراچی نامہ

سیما علی

لائبریرین
جوڑیا بازار
تحریر : اقبال اے رحمن صاحب
ہندوستان کے صوبے گجرات کی ایک چھوٹی سی بندرگاہ کا نام " جوڑیا " ہے، اس بندرگاہ پر جہاز تو نہیں لگتے بڑی لانچوں کے زریعے سامان کی نقل و حمل ہوتی ہے، یہاں سے ناریل اور اس سے بنی مصنوعات جیسے رسّی اور اسطرح کی دیگر چیزیں، اسکے علاوہ گڑ اور خام چینی جوڑیا کی مصنوعات کے طور ہر پسند کئے جانے کے سبب لانچوں کے زریعے پورے ہندوستان میں سپلائی کی جاتی تھیں، کراچی میں اسکی ی بڑھتی ہوئی مانگ جوڑیا کے بیوپاریوں کو بھی کراچی کھینچ لائی، اسطرح کی مصنوعات کی فروخت کے لئے انہوں نے جونا مارکیٹ سے نزدیک تر جس علاقے میں کاروبار کا آغاز کیا شروع میں جوڑیا والوں کا بازار کہلایا اور آگے جاکر بر بنائے اختصار جوڑیا بازار ہوگیا اور ایسا مشہور ہوا کہ پورا بازار ہی جوڑیا بازار کے نام سے معروف ہوگیا۔۔

crv84rl.jpg
 
Top