پروفیسرمظفر حنفی ::::: کل جو دِیوار گِراتا ہُوا طوُفاں نِکلا ::::: Prof. Muzafar Hanfi

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 27, 2015

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,645
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    غزل
    [​IMG]

    کل جو دِیوار گِراتا ہُوا طوُفاں نِکلا
    پائے وحشت کے لئے گھر میں بَیاباں نِکلا

    جانے کِس غم سے منوّر ہے ہر اِک لَوحِ جَبِیں
    درد ہی رشتۂ اوراقِ پریشاں نِکلا

    سر جُھکایا تو کبھی پاؤں تراشے اپنے !
    پھر بھی مقتل میں مِرا قد ہی نُمایاں نِکلا

    جال ہر سمت رِوایَت نے بِچھا رکھّے تھے
    بابِ اِنکار کھُلا، جادۂ اِمکاں نِکلا

    ہم کہ محرُومیِ قِسمت کا گِلہ رکھتے تھے
    جس کو نزدِیک سے دیکھا وہ پریشاں نِکلا

    آج بستی میں ہر اِک شخص ہے آئینہ بَدست
    ہر کوئی خود سے مُلاقات پہ حیراں نِکلا

    اب کسے چاک کریں، کِس کے اُڑائیں پُرزے
    ہر گریبان، مُظفر کا گریباں نِکلا

    پروفیسرمظفر حنفی
     
    آخری تدوین: ‏نومبر 27, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  2. سید عطوف الحسن

    سید عطوف الحسن محفلین

    مراسلے:
    7
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    واہ واہ ،، بہت عمدہ جناب،،،
     
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر