بہادر شاہ ظفر پان کھا کر نہ رقیبوں سے کیا کر باتیں، بہادر شاہ ظفر

ملائکہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 19, 2009

  1. ملائکہ

    ملائکہ محفلین

    مراسلے:
    10,592
    موڈ:
    Daring
    پان کھا کر نہ رقیبوں سے کیا کر باتیں
    رنگ لائیں نہ تیری کرنی چبا کر باتیں

    دیکھو تقدیر جو ایک بار ادھر آتے ہیں
    جاتے ہیں لاکھوں ہی وہ ہم کو سنا کر باتیں

    ہمدمو انکو میری شکل سے نفرت ہی سہی
    سن تو جائیں میرے دو کہو آ کر باتیں

    کیا تماشا ہے نہیں کرتے نگاہ بھی وہ ادھر
    کرتے ہیں غیر سے کیا آنکھ ملا کر باتیں

    بزم جاناں میں دلا منہ سے کس و ناکس کے
    تجھے منظور جو سننی ہیں منا کر باتیں

    تجھے اے شوخ غضب یاد ہے ڈھب ملنے کا
    سب سے مل جائے ہے دو چار ملا کر باتیں

    دل سے ہم، ہم سے دل اے یار جدائی میں تیرے
    کرتے ہیں دو دو پہر اشک بہا کر باتیں

    مجھے ڈر ہے کہ مفسد نہ کہیں بھڑکائیں
    اور نہیں جھوٹی سچی مری جانب سے لگا کر باتیں

    آپ سے آپ ہی وہ ہم سے بگڑ جاتے ہیں
    کچھ نہ کچھ ہم پہ ظفر روز بنا کر باتیں

    بہادر شاہ ظفر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. زین

    زین لائبریرین

    مراسلے:
    12,408
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    ویسے یہ تو سوتے میں ٹائپ نہیں‌کیا ؟:grin:

    بہت خوب
     
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,853
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت خوب ملائکہ۔ بہت ہی خوبصورت انتخاب ہے۔ بہت شکریہ شریکِ محفل کرنے کے لئے۔
     
  4. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,499
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ ملائکہ خوبصورت غزل شیئر کرنے کیلیے!
     
  5. ملائکہ

    ملائکہ محفلین

    مراسلے:
    10,592
    موڈ:
    Daring
    اب میں ہر وقت سوتی تھوڑی ہوں:chatterbox::chatterbox:

    آپ سب لوگوں کا شکریہ:):):)
     
  6. فرحت کیانی

    فرحت کیانی لائبریرین

    مراسلے:
    10,984
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    واہ۔ بہت خوب۔
    بہت شکریہ ملائکہ۔ :)
     
  7. شاہ حسین

    شاہ حسین محفلین

    مراسلے:
    2,901
    بہت خوب انتخاب ہے
     

اس صفحے کی تشہیر