1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

نظم : اسے یہ کون سمجھائے : از : علی عدنان

مغزل نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 18, 2012

  1. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    اسے یہ کون سمجھائے

    اسے یہ کون سمجھائے ۔۔۔۔۔
    وہ دشت خامشی میں ۔۔۔
    انگلیوں میں سیپیاں پہنے ۔۔۔۔۔
    کسی سوکھے سمندر کی ۔۔۔
    ادھوری پیاس کی باتیں ۔۔
    بہت چپ چاپ سنتا ہے ۔۔۔۔۔
    بہت خاموش رہتا ہے ۔۔۔
    اسے یہ کون سمجھائے ۔۔
    خوشی کے ایک آنسو سے ۔۔۔۔۔
    سمندر بھر بھی جاتے ہیں ۔۔۔
    بہت خاموش رہنے سے ۔۔۔
    تعلق مر بھی جاتے ہیں ۔۔۔

    علی عدنان
     
    مدیر کی آخری تدوین: ‏دسمبر 17, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 8
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ کاشفی بھائی سلامت رہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
  4. غ۔ن۔غ

    غ۔ن۔غ محفلین

    مراسلے:
    2,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    بہت پیاری نظم ہے محمود لیکن کچھ تعلق ایسے بھی ہوتے ہیں جو کبھی نہیں ٹوٹتے ، بہت خاموش رہنے سے بھی نہیں
    کیا خیال ہے تمھارا؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    اگر خاموش رہنےسے
    تعلق مرنے لگ جائیں
    تو حیف ایسے تعلق پر
    تو لعنت ایسے رشتے پر
    تو اس مردود سے کہہ دو
    تمھارا مرنا ہی اچھا
    تمھاری موت ہی بہتر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6
    • زبردست زبردست × 1
  6. غ۔ن۔غ

    غ۔ن۔غ محفلین

    مراسلے:
    2,114
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    بہت خوب فاتح بھیا ، اب دیکھتے ہیں محمود کی کیا رائے ہے اس سلسلے میں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    محترم م۔م۔مغل صاحب اور محترمہ غزل ناز غزل صاحبہ یہ غزل دیکھیے گا کہ جس قسم کے جذبات کا اظہار ہم نے اوپر کیا ہے اس سے ملتی جلتی داخلی کیفیات کی غماز ایک غزل ہے یہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    میرا جو خیال ہے وہ تو تم نے کہہ دیا ہے غزل ۔۔:rose:
    بعض اوقات ہم شاعر کی داخلی کیفیات کو منہا کرکے محض لفظوں کی صراحت پر محمول کرتے ہیں۔
    تمھارا کہنا سو فیصد درست ہے مگر اب ہم کسی شاعر کو یہ تو نہیں سکھا سکتے ناں کہ وہ کیا لکھے ۔
    حقیقت وہی ہے جو تم نے کہا کہ ، کچھ تعلق ایسے ہوتے ہیں جو کائنات کی کوئی طاقت نہیں توڑ سکتی ۔
    برجستہ اظہار پر جی خوش ہوا۔۔ :rose:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    سو فیصد متفق فاتح بھائی ۔۔
    بچارے شاعر نے محض ڈراوا دیا ہوگا۔۔
    باقی آپ نے جو ردِ عمل ظاہر کیا ہے یہ شاعری کی معراج ہے۔۔
    یہ شاعری اتنا اثر رکھتی ہے کہ جوابی ردِ عمل بھی اتنا ہی شدید ہوتا ہے۔۔
    سلامت باشید رو بخیر۔۔:angel:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  10. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    غزل میں رائے دے چکا ہوں اور تمھاری اور فاتح بھائی کی رائے سے صد فیصد متفق ہوں۔۔
    جی فاتح بھائی میں بھی دیکھتا ہوں دیے گئے ربط پر ، بس ابھی حاضر ہوا۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  11. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,150
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    خوب نظم ہے محمود صاحب، شکریہ شیئر کرنے کیلیے۔

    ذاتی طور پر مجھے بھی اس خیال سے اتفاق نہیں ہے یعنی

    بہت خاموش رہنے سے ۔۔۔
    تعلق مر بھی جاتے ہیں ۔۔۔

    لیکن میں اتنا ضرور جانتا ہوں کہ کچھ لوگ ایسا خیال رکھتے ضرور ہیں سو اس کو اگر نظم کر دیا گیا ہے تو خوب ہے :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,624
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    گوگلنے سے پتہ چلتا ہے کہ یہ نظم عباس تابش کی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  13. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ وارث بھائی ۔ شکریہ بابا جانی میں نام تدوین کرکے شامل کرتا ہوں۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  14. محمد عارب

    محمد عارب محفلین

    مراسلے:
    3
    یہ نظم علی عدنان کی ہے۔ اس کے دو حصے ہیں.
     
  15. Maha

    Maha محفلین

    مراسلے:
    5
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    اسے کون سمجھائے
    اسے عشق ہوا ہے
    اور عشق خود عالم ہے
    سمجھنے کو سمجھانے کو
     
  16. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,203
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    تفصیل؟
     
  17. محمد عارب

    محمد عارب محفلین

    مراسلے:
    3
    نیٹ پہ مختلف شعرا کے نام سے موجود ہے. لیکن میں ذاتی طور پر جانتا ہوں اور بارہا مشاعرے میں علی عدنان سے سن رکهی ہےمجهے. ان کی شاگردی کا شرف بهی حاصل ہے.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    25,203
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    ضرور پیش کیجیے گا مکمل
     
  19. محمد عارب

    محمد عارب محفلین

    مراسلے:
    3
    [​IMG]
    علی عدنان

    اسے یہ کون سمجھائے

    اسے یہ کون سمجھائے ۔۔۔۔۔
    وہ دشت خامشی میں ۔۔۔
    انگلیوں میں سیپیاں پہنے ۔۔۔۔۔
    کسی سوکھے سمندر کی ۔۔۔
    ادھوری پیاس کی باتیں ۔۔
    بہت چپ چاپ سنتا ہے ۔۔۔۔۔
    بہت خاموش رہتا ہے ۔۔۔
    اسے یہ کون سمجھائے ۔۔
    خوشی کے ایک آنسو سے ۔۔۔۔۔
    سمندر بھر بھی جاتے ہیں ۔۔۔
    بہت خاموش رہنے سے ۔۔۔
    تعلق مر بھی جاتے ہیں ۔۔۔

    دوسرا حصہ

    اے دشت خامشی میں چلنے والے بے نوا ساتھی
    مجھے کیوں ایسا لگتا ہے
    تری خاموشیاں کچھ بھی نہیں
    بس اک دکھاوا ہے
    ترے اس موم جیسے جسم میں خاموش لاوا ہے
    کہ تو سب کچھ سمجھتا ہے
    مگر کچھ کر نہیں سکتا
    کسی کو مارنے والا
    کسی پہ مر نہیں سکتا

    علی عدنان

    نوٹ: کچھ دن پہلے ان سے ملاقات ہوئی تو انھوں نے بتایا کہ یہ دونوں نظمیں زمانہ ء طالب علمی کی ہیں۔ جب وہ بی۔اے میں تھے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    3,013
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر