1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

نظیر نظم۔ پری کا سراپا (خونریز کرشمہ، ناز و ستم، غمزوں کی جھکاوٹ ویسی ہے) از نظیر اکبر آبادی

فاتح نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 11, 2014

  1. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    پری کا سراپا

    خُوں ریز کرشمہ، ناز و ستم، غمزوں کی جھُکاوٹ ویسی ہے
    مژگاں کی سناں، نظروں کی انی، ابرو کی کھِچاوٹ ویسی ہے
    قتّال نگہ اور ڈشٹ غضب، آنکھوں کی لَگاوٹ ویسی ہے
    پلکوں کی جھَپک، پُتلی کی پھِرت، سُرمے کی گھُلاوٹ ویسی ہے
    عیّار نظر، مکّار ادا، تیوری کی چَڑھاوٹ ویسی ہے

    بے درد، ستمگر، بے پروا، بے کل، چنچل، چَٹکیلی سی
    دل سخت قیامت پتھر سا اور باتیں نرم رسیلی سی
    آنوں کی بان ہٹیلی سی، کاجل کی آنکھ کٹیلی سی
    وہ انکھیاں مست نشیلی سی، کچھ کالی سی کچھ پیلی سی
    چِتوَن کی دغا، نظروں کی کَپَٹ، سینوں کی لَڑاوٹ ویسی ہے

    تھی خوب دوپٹہ کی سر پر سنجاف تمامی کی الٹی
    بل دار لَٹیں، تصویر جبیں، جکڑی مینڈھی، سجّی کنگھی
    دل لُوٹ نہ جاوے اب کیونکر اور دیکھ نہ نکلے کیونکر جی
    وہ رات اندھیری بالوں سے، وہ مانگ چمکتی بجلی سی
    زلفوں کی کھُلت، پٹی کی چمت، چوٹی کی گُندھاوٹ ویسی ہے

    اس کافر بینی اور نتھ کے انداز قیامت شان بھرے
    اور گہرے چاہِ زنخداں میں سو آفت کے طوفان بھرے
    وہ نرمے صاف ستارا سے اور موتی سے دامان بھرے
    وہ کان جواہر کان بھرے کن پھولوں، بالے جان بھرے
    بُندے کی لٹک،جھُمکے کی جھمک، بالے کی ہِلاوٹ ویسی ہے

    چہرے پر حسن کی گرمی سے ہر آن چمکتے موتی سے
    خوش رنگ پسینے کی بُوندیں، سو بار جھمکتے موتی سے
    ہنسنے کی ادا میں پھول جھڑے، باتوں میں ٹپکتے موتی سے
    وہ پتلے پتلے ہونٹ غضب، اور دانت چمکتے موتی سے
    پاؤں کی رنگاوٹ قہر ستم، دھڑیوں کی جماوٹ ویسی ہے

    اس سینے کا وہ چاک ستم، اس کُرتی کا تزّیب غضب
    اس قد کی زینت قہر بلا، اس کافر چھب کا زیب غضب
    ان ڈبیوں کا آزار بُرا، ان گیندوں کا آسیب غضب
    وہ چھوٹی چھوٹی سخت کچیں، وہ کچے کچے سیب غضب
    انگیا کی بھڑک، گوٹوں کی جھمک، بُندوں کی کساوٹ ویسی ہے

    تھی پہنے دونوں ہاتھوں میں کافر جو کڑے گنگا جمنی
    کچھ شوخ کڑوں کی جھنکاریں، کچھ جھمکے چوڑی باہوں کی
    یہ دیکھ کے عالم عاشق کا سینے میں نہ تڑپے کیونکر جی
    وہ پتلی پتلی انگشتیں، پوریں وہ نازک نازک سی
    مہندی کی رنگت، فندق کی نبت، چھلّوں کی چھلاوٹ ویسی ہے

    تقریر بیاں سے باہر ہے، وہ کافر حسن اہا ہاہا
    کچھ آپ نئی، کچھ حسن نیا، کچھ جوش جوانی اٹھنے کا
    لپکیں جھپکیں ان باہوں کی، یارو میں آہ کہوں کیا کیا
    وہ بانکے بازو ہوش ربا، عاشق سے کھیلے بانک پٹا
    پہونچی کی پہنچ پہونچے یہ غضب، بانکوں کی بندھاوٹ ویسی ہے

    وہ کافر دھج جی دیکھ جسے سو بار قیامت کا لرزے
    پازیب، کڑے، پائل، گھنگرو، کڑیاں، چھڑیاں، گجرے، توڑے
    ہر جنبش میں سو جھنکاریں، ہر ایک قدم پر سو جھمکے
    وہ چنچل چال جوانی کی، اونچی ایڑی، نیچے پنجے
    کفشوں کی کھٹک، دامن کی جھٹک، ٹھوکر کی لگاوٹ ویسی ہے

    اک شورِ قیامت ساتھ چلے، نکلے کافر جس دم بن ٹھن
    بل دار کمر، رفتار غضب، دل کی قاتل، جی کی دشمن
    مذکور کروں کیا اب یارو، اس شوخ کے کیا کیا چنچل پن
    کچھ ہاتھ ہلیں، کچھ پاؤں ہلیں، پھڑکے بازو تھرکے سب تن
    گالی وہ بلا، تالی وہ ستم، انگلی کی نچاوٹ ویسی ہے

    یہ ہوش قیامت کافر کا، جو بات کہوں وہ سب سمجھے
    روٹھے، مچلے، سو سوانگ کرے، باتوں میں لڑے، نظروں میں ملے
    یہ شوخی، پھرتی، بے تابی، ایک آن کبھی نِچلی نہ رہے
    چنچل اچپل، مٹکے چٹکے، سر کھولے ڈھانکے، ہنس ہنس کے
    قہقہہ کی ہنساوٹ اور غضب ٹھٹھوں کی اڑاوٹ ویسی ہے

    کہنی مارے چٹکی لے کے، چھیڑے جھڑکے، دیو ے گالی
    ہر آن چہ خوش، ہر دم اچھا، ہر بات خوشی کی چہل بھری
    نظروں میں صاف اُڑا لے دل، اس ڈھب کی کافر عیّار ی
    اور ہٹ جاوے سو کوس پرے، گر بات کہوں کچھ مطلب کی
    رمزوں کے ضلعے، غمزوں کی جُگت، پھبتی کی پھباوٹ ویسی ہے

    قاتل ہر آن نئے عالم، کافر ہر آن نئی جھمکیں
    بانکی نظریں، ترچھی پلکیں، بھولی صورت، میٹھی باتیں
    دل بس کرنے کے لاکھوں ڈھب، جی لینے کی سو سو گھاتیں
    ہر وقت پھبن، ہر آن سجن، دم دم میں بدلے لاکھ سجیں
    باہوں کی جھپک، گھونگٹ کی ادا، جوبن کی دکھاوٹ ویسی ہے

    جو اس پر حسن کا عالم ہے، وہ عالم حور کہاں پاوے
    کہ پردہ منہ سے دور کرے، خورشید کو چکر آ جاوے
    جب ایسا حسن بھبھوکا ہو، دل تاب بھلا کیونکر لاوے
    وہ مکھڑا چاند کا ٹکڑا سا، جو دیکھ پری کو غش آوے
    گالوں کی دمک، چوٹی کی جھمک، رنگوں کی کھلاوٹ ویسی ہے

    تصویر کا عالم نکھ سکھ سے چھب تختی صاف پری کی سی
    کچھ چین جبیں پر اینٹھ رہی، اور ہونٹوں میں کچھ گالی سی
    بے دردی سختی بہتیری اور مہر و محبت تھوڑی سی
    جھوٹی عیّاری، ناک چڑھی، بھولی بھالی، پکّی پیسی
    باتوں کی لگاوٹ قہر ستم، نظروں کی ملاوٹ ویسی ہے

    کچھ ناز و ادا، کچھ مغروری، کچھ شرم و حیا، کچھ بانک پنا
    کچھ آمد حسن کے موسم کی، کچھ کافر حسن رہا گدرا
    کچھ شور جوانی اٹھنی کا، چڑھتا ہے امڈ کر جُوں دریا
    وہ سینہ ابھرا جوش بھرا، وہ عالم جس کا جھوم رہا
    شانوں کی اکڑ، جوبن کی تکڑ، سج دھج کی سجاوٹ ویسی ہے

    یہ کافر گُدّی کا عالم، گھبرائے پری بھی دیکھ جسے
    وہ گورا صاف گلا ایسا، بہہ جاوے موتی دیکھ جسے
    دل لوٹے، تڑپے، ہاتھ ملے، اور غش کھاوے جی دیکھ جسے
    وہ گردن اونچی حسن بھری، کٹ جائے صراحی دیکھ جسے
    دائیں کی مزت، بائیں کی پھرت، مونڈھوں کی کھچاوٹ ویسی ہے

    جب ایسے حسن کا دریا ہو، کس طور نہ لہروں میں بہیے
    گر مہر و محبت ہو بہتر، اور جور و جفا ہو تو سہیے
    دل لوٹ گیا ہے غش کھا کر، کریں اور تو آگے کیا کہیے
    مل جائے نظیرؔ ایسی جو پری چھاتی سے لپٹ کر سو رہیے
    بوسوں کی جھپک، بغلوں کی لپک، سینوں کی ملاوٹ ویسی ہے

    نظیرؔ اکبر آبادی​

    اس نظم کے چند مصرعے چھایا گنگولی نے بے حد خوبصورت انداز میں گائے ہیں۔ وہ بھی سنیے:
     
    • زبردست زبردست × 9
  2. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,645
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm

    جو اُس پر حُسن کا عالم ہے ، وہ عالم حُور کہاں پاوے
    کہ پردہ منہ سے دُور کرے ، خورشید کو چَکّر آ جاوے

    جب ایسا حُسن بھبھوکا ہو، دل تاب بَھلا کیونکر لاوے
    وہ مُکھڑا چاند کا ٹُکڑا سا، جو دیکھ پری کو غش آوے
    :thumbsup2:


    تشکّر شیئر کرنے پر ، فاتح صاحب !
    بہت خوش رہیں :):)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,972
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    واہ فاتح بھائی لاجواب۔۔۔ بہت اعلیٰ

    اچھا چند الفاظ کے معنی سمجھ نہیں آئے۔۔۔ ڈشٹ تو رذیل کو کہتے ہیں۔۔۔ تو یہاں کن معنوں میں استعمال ہوا پھر۔۔۔۔
    "قتّال نگہ اور ڈشٹ غضب، آنکھوں کی لَگاوٹ ویسی ہے"

    تزّیب کا کیا مطلب ہے؟
    "اس سینے کا وہ چاک ستم، اس کُرتی کا تزّیب غضب"

    اور نبت نبات سے ہے؟
     
    • متفق متفق × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    یہ بھی اسی سے ملتا جلتا کلام ہے، نجانے کس کا۔۔۔۔حبیب ولی محمد کی آواز

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  5. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بہادر شاہ ظفر کا
    اگلا ہدف یہی کلام ارسال کرنا ہے۔

    ہر بات پہ ہم سے وہ جو ظفرؔ کرتا ہے رُکاوٹ برسوں سے
    اور اس کی چاہت رکھتے ہیں ہم آج تلک پھر ویسی ہی :)
     
    آخری تدوین: ‏فروری 12, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  6. محمود احمد غزنوی

    محمود احمد غزنوی محفلین

    مراسلے:
    6,435
    موڈ:
    Torn
    اب پتہ چلا کہ مغل کن کاموں میں مشغول تھے 1857 سے پہلے۔۔۔:)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    چکلے کوٹھے شاعری اور وہ بھی ایسی کہ عورتوں کے اعضا کی ایسی سرجیکل ڈیفینیشنز اور ساتھ مساجد کی تعمیر۔۔۔ یہی کارنامے تھے مغلوں کے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  8. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,972
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    خبردار۔۔۔۔ ثناء خوان تقدیس مشرق کو لاؤ۔۔۔ ثناءخوان تقدیس مشرق کہاں ہیں۔۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  9. صائمہ شاہ

    صائمہ شاہ محفلین

    مراسلے:
    4,659
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Cool
    فاتح شاعر کی عُمر کیا ہوگی اس نظم کی تخلیق کے وقت ؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    شاعر نے یوں تو 95 برس کا ہو کر کوچ کیا ہے لیکن جس قدر تجربات کا نچوڑ اس نظم میں بیان کیا گیا ہے ان تجربات کی وسعت کو جانچتے ہوئے ان کے حصول کے لیے 95 بھی کم لگتے ہیں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 5
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. صائمہ شاہ

    صائمہ شاہ محفلین

    مراسلے:
    4,659
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Cool
    جی ماشاءاللہ پچاس سے اُوپر والے ہی خیالات ہیں نظم میں :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  12. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,972
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    ہو سکتا ہے اوور ٹائم لگایا ہو ۔۔۔۔۔ وقت کی قلت کے باعث۔۔۔۔ :rolleyes:
    میرے اوپر سوال کا جوا ب بھی دیں۔۔۔۔۔ :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  13. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    دراصل آپ کے سوالات کے جوابات انتہائی خفیہ و ذاتی نوعیت کے تھے لہٰذا ہم نے سوچا کہ ملنے تو آپ نے آنا ہی ہے تو ملاقات پر تفصیلاً اس اجمال کی جمالیات بیان کر لیں گے۔ :laughing:
    لیکن۔۔۔
    ترے وعدے پر جیے ہم تو یہ جان جھوٹ جانا
    کہ خوشی سے مر نہ جاتے اگر اعتبار ہوتا
    ڈشٹ یہاں بد یا بہت برا کے معنوں میں استعمال ہوا ہے۔
    باقیوں کی بابت خفیہ اور ذاتی نوعیت کا جواب یہ ہے کہ ہمیں بھی نہیں معلوم ;)
    حتیٰ کہ کلیات نظیر کے ساتھ جو فرہنگ شایع ہوئی اس میں بھی اس نظم کے تحت صرف تین الفاظ کے معانی لکھ کر جان چھڑا لی گئی ہے ورنہ شاید وہیں سے معلوم ہو جاتا ۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  14. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    17,972
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    آج گھر میں مالک مکان سے کہلوا کر کچھ کام کروا رہا ہوں۔۔۔۔ فارغ ہوتے ہی حاضری دوں گا دربار عالیہ پر۔۔۔۔۔ :D
    یہ نظیر صاحب بہت ہی گھنے تھے۔۔۔۔۔ :p اپنے دوستوں کے درمیان رکھے کوڈ ورڈز شاعری میں استعمال کرتے رہے۔۔۔۔۔
     
  15. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,226
    موڈ:
    Asleep
    کافی خطرناک قسم کی شاعری ہے۔ اگر PTA والوں کو اس کی خبر مل گئی تو سینسر ہونے کا بھی کافی خدشہ ہے۔ :LOL:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  16. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,399
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    تبصرہ کرنا خطرے سے خالی نہیں
    اتنا ضرور کہوں گا کلام بہت "گجب" کا ہے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • زبردست زبردست × 1
  17. سید شہزاد ناصر

    سید شہزاد ناصر محفلین

    مراسلے:
    9,399
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    نظیر کے کلام میں بہت سے الفاظ ایسے ہیں جن کے مطالب شاید نظیر کو بھی معلوم نہ ہوں
    یہ بھی ممکن ہے کہ بہت سے الفاظ متروک ہو گئے ہوں علاوہ ازیں ان کے کلام میں مقامی زبانوں کے بہت سے الفاظ بھی شامل ہیں جو ایک محدود علاقے میں بولی جاتی تھیں اس کے باوجود نظیر کے کلام کی ہمہ گیری سے انکار ممکن نہیں
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  18. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    9,140
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    یہ تو بالیقین ریختہ کا معلقہ ءعجم اولیٰ ہے ۔ ;)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1

اس صفحے کی تشہیر