میرے پسندیدہ اشعار

شمشاد

لائبریرین
کب لوٹا ہے بہتا پانی، بچھڑا ساجن، روٹھا دوست
ہم نے اس کو اپنا جانا جب تک ہاتھ میں داماں تھا
(ابن انشاء)
 

سیما علی

لائبریرین
اے دل کی لگی چل یوں ہی سہی ، چلتا تو ہوں ان کی محفل میں
اس وقت مُجھے چونکا دینا ، جب رنگ پہ محفل آ جائے

اب کیوں ڈھونڈوں وہ چشم کرم ، ہونے دے ستم بالائے ستم
میں چاہتا ہوں اے جذبہ دل مُشکل پس مُشکل آ جائے

بہزاد لکھنوی
 

سیما علی

لائبریرین
نتیجہ پھر وہی ہوگا سنا ہے چال بدلے گا
پرندے بھی وہی ہونگے شکاری جال بدلے گا

بدلنے ہیں تو دن بدلو، بدلتے ہو تو ہندسے ہی
مہینے پھر وہی ہونگے سنا ہے سال بدلے گا

اگر ہم مان لیں عابی مہینہ ساٹھ سالوں کا
بتاؤ کتنے سالوں میں ہمارا حال بدلے گا
 

سیما علی

لائبریرین
دائم پڑا ہوا ترے در پر نہیں ہوں میں
خاک ایسی زندگی پہ کہ پتھر نہیں ہوں میں
کیوں گردش۔ مدام سے گھبرا نہ جائے دل
انسان ہوں پیالہ و ساغر نہیں ہوں میں
 
Top