محبت درد ہو جاے گی اک دن

میاں وقاص نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 29, 2015

  1. میاں وقاص

    میاں وقاص محفلین

    مراسلے:
    102
    موڈ:
    Relaxed
    محبت درد ہو جاے گی اک دن
    حرارت سرد ہو جاے گی اک دن

    ثمر یہ باہمی نفرت کا ہو گا
    یہ امت، فرد ہو جاے گی اک دن

    قدم بوسی کرے گی راہ میری
    یا، منزل گرد ہو جاے گی اک دن

    کبھی بادل نے اس جانب نہ دیکھا
    یہ ٹہنی زرد ہو جاے گی اک دن

    حصول_حق کی خاطر یقیناً
    یہ عورت، مرد ہو جاے گی اک دن

    پتہ شاہین یہ ہرگز نہیں تھا
    خوشی بھی درد ہو جاے گی اک دن

    حافظ اقبال شاہین
     

اس صفحے کی تشہیر