احمد ندیم قاسمی غزل ۔ اب تو شہروں سے خبر آتی ہے دیوانوں کی ۔ احمد ندیم قاسمی

محمداحمد نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 27, 2009

  1. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    غزل

    اب تو شہروں سے خبر آتی ہے دیوانوں کی
    کوئی پہچان ہی باقی نہیں ویرانوں کی

    اپنی پوشاک سے ہشیار! کہ خدام قدیم
    دھجیاں مانگتے ہیں اپنے گریبانوں کی

    صنعتیں پھیلتی جاتی ہیں ، مگر اس کے ساتھ
    سرحدیں ٹوٹتی جاتی ہیں گلستانوں کی

    دل میں وہ زخم کھلے ہیں چمن کیا شے ہے
    گھر میں بارات سی اتری ہے گلدانوں کی

    ان کو کیا فکر کہ میں پار لگا ، یا ڈوبا
    بحث کرتے رہے ساحل پہ جو طوفانوں کی

    تیری رحمت تو مسلّم ہے مگر یہ تو بتا
    کون بجلی کو خبر دیتا ہے کاشانوں کی

    مقبرے بنتے ہیں زندوں کے مکانوں سے بلند
    کِس قدر اوج پہ تکریم ہے انسانوں کی

    ایک اِک یاد کے ہاتھوں پہ چراغوں بھرے طشت
    کعبہ دل کی فضا ہے کہ صنم خانوں کی

    احمد ندیم قاسمی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
  2. سکون

    سکون محفلین

    مراسلے:
    482
    بہت ہی خوبصورت انتخاب ہے
     
  3. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,903
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واہ بہت خوبصورت غزل ہے، شکریہ احمد صاحب شیئر کرنے کیلیے!
     
  4. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    محترم سکون اور وارث بھائی

    انتخاب کی پسندیدگی کا شکریہ!
     
  5. ملائکہ

    ملائکہ محفلین

    مراسلے:
    10,592
    موڈ:
    Daring
    واہ واہ ہر شعر ہی بہت اعلا ہے:)
     
  6. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت شکریہ ملائکہ!
     
  7. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,288
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    :great:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. ناعمہ عزیز

    ناعمہ عزیز لائبریرین

    مراسلے:
    23,247
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    بہت عمدہ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. زونی

    زونی محفلین

    مراسلے:
    4,268
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    دل میں وہ زخم کھلے ہیں چمن کیا شے ہے
    گھر میں بارات سی اتری ہے گلدانوں کی


    بہت خوب جناب ۔۔۔۔۔ شکریہ شئیرنگ کیلئے !!!!
     
  10. قرۃالعین اعوان

    قرۃالعین اعوان لائبریرین

    مراسلے:
    8,973
    موڈ:
    Lurking
  11. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,101
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    :aadab:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  12. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    16,460
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اب تو شہروں سے خبر آتی ہے دیوانوں کی
    کوئی پہچان ہی باقی نہیں ویرانوں کی

    اپنی پوشاک سے ہشیار کہ خدام قدیم
    دھجیاں مانگتے ہیں اپنے گریبانوں کی

    صنعتیں پھیلتی جاتی ہیں مگر اس کے ساتھ
    سرحدیں ٹوٹتی جاتی ہیں گلستانوں کی

    دل میں وہ زخم کھلے ہیں کہ چمن کیا شے ہے
    گھر میں بارات سی اتری ہوئی گل دانوں کی

    ان کو کیا فکر کہ میں پار لگا یا ڈوبا
    بحث کرتے رہے ساحل پہ جو طوفانوں کی

    تیری رحمت تو مسلم ہے مگر یہ تو بتا
    کون بجلی کو خبر دیتا ہے کاشانوں کی

    مقبرے بنتے ہیں زندوں کے مکانوں سے بلند
    کس قدر اوج پہ تکریم ہے انسانوں کی

    ایک اک یاد کے ہاتھوں پہ چراغوں بھرے طشت
    کعبۂ دل کی فضا ہے کہ صنم خانوں کی
     
  13. سحر کائنات

    سحر کائنات محفلین

    مراسلے:
    117
    اعلی
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر