1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

جون ایلیا غزل - ٹھیک ہے خود کو ہم بدلتے ہیں - جون ایلیا

عین عین نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 6, 2009

  1. عین عین

    عین عین لائبریرین

    مراسلے:
    795
    موڈ:
    Depressed
    ٹھیک ہے خود کو ہم بدلتے ہیں
    شکریہ مشورت کا چلتے ہیں

    ہو رہا ہوں میں کس طرح برباد
    دیکھنے والے ہاتھ ملتے ہیں

    کیا تکلف کریں‌یہ کہنے میں
    جو بھی خوش ہے ہم اس سے جلتے ہیں

    ہے اُسے دُور کا سفر درپیش
    ہم سنبھالے نہیں سنبھلتے ہیں

    تم بنو رنگ،تم بنو خوش بُو
    ہم تو اپنے سخن میں‌ ڈھلتے ہیں

    ہے عجب فیصلے کا صحرا بھی
    چل نہ پڑیے تو پائوں جلتے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6
  2. نوید صادق

    نوید صادق محفلین

    مراسلے:
    2,278

    کیا وجدانی غزل ہے۔
    ہے اسے دور کا سفر درپیش
    ہم سنبھالے نہیں سنبھلتے ہیں

    واہ واہ۔
    کیا کیفیات ہیں!!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  3. پیاسا صحرا

    پیاسا صحرا محفلین

    مراسلے:
    704
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    "کیا تکلف کریں‌یہ کہنے میں
    جو بھی خوش ہے ہم اس سے جلتے ہیں"

    جون ایلیا بھی کیا شاعر تھے ۔
    بہت خوب غزل ہے بھائی جی شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    سبحان اللہ کیا کہنے واہ ،
    بہت شکریہ عارف عزیز صاحب۔
    بہت شکریہ
     

اس صفحے کی تشہیر