ابن انشا عرب کے عوام ------- ابن انشاء

طالوت نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 23, 2008

  1. طالوت

    طالوت محفلین

    مراسلے:
    8,353
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Bashful
    قاہرہ کے شبینہء کلب کے حسینو !
    اپنے جلوے نہ اتنے نمایاں کرو
    کوئے بیروت و بصرہ کے بے آستینو !
    اپنے غمزوں کو نہ اتنا ارزاں کرو
    شیخ عالی مقام !
    باز کچھ روز کج قفس میں رہیں
    شاہ ذی احترام !
    تجھ کو ناموس امت کی قسمیں رہیں
    اے عرب کے عوام !
    ہاں رقابت کے جذبات بس میں رہیں
    ورنہ قطرہ یہ آل اسرائیل کا
    بحرِ ظلمات بن کے بپھر جائے گا
    ایک عالم کو غرقاب کر جائے گا
    وہ تو فوجوں کے اڈے بنایا کریں
    آپ ! رونق حرم کی بڑھایا کریں
    ان کا مقصد جہانِ عرب پر بزن
    آپ کی ترک تازی کی حد ہے یمن
    وہ مسخر کریں ارض و افلاک کو
    آپ کے مورچے ریڈیو ریڈیو
    آپ تسبیح و جام و مے ارغواں
    وہ سپاہی زن و بچہ ، پیر و جواں
    آپ اونٹوں پر مخمل سجاتے ہوئے
    وہ نئے اسلحے آزماتے ہوئے
    آپ سمجھے یہ کچھ روز کا کھیل ہے
    ان کی نظروں میں تو آپ کا تیل ہے
    آپ کی کشت ہے ، آپ کا شہر
    آپ کا دشت ہے ، آپ کی نہر

    ------------------------------
    وسلام
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 8
  2. عمران اسرا

    عمران اسرا محفلین

    مراسلے:
    1
    افسوس کہ آج پچاس سال بعد عربوں کے حالات اس سے بھی بد تر ہیں ۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  3. اکمل زیدی

    اکمل زیدی محفلین

    مراسلے:
    4,021
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Question
    بہت عمدہ ۔ ۔ ۔ بہت اعلیٰ منظر کشی کی گئ ہے ۔ ۔ ۔ ۔
     

اس صفحے کی تشہیر