سُرُور بارہ بنکوی ::::: کبھی اپنے عشق پہ تبصرے، کبھی تذکرے رُخِ یار کے ::::: Suroor Barahbankvi

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 9, 2015

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,543
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    غزلِ
    [​IMG]
    کبھی اپنے عشق پہ تبصرے، کبھی تذکرے رُخِ یار کے
    یونہی بِیت جائیں گے یہ بھی دن، جو خِزاں کے ہیں نہ بہار کے

    یہ طلِسمِ حُسنِ خیال ہے، کہ فریب فصلِ بہار کے
    کوئی جیسے پُھولوں کی آڑ میں ابھی چُھپ گیا ہے پُکار کے

    سِیو چاکِ دامن و آستیں، کہ وہ سرگراں نہ ہوں پھر کہِیں
    یہی رُت ہے عِشرتِ دِید کی، یہی دِن ہیں آمدِ یار کے

    ابھی اور ماتمِ رنگ و بُو کہ چمَن کو ہے طَلَبِ نمُو
    تِرے اشک ہوں کہ مِرا لہُو، یہ امِیں ہیں فصلِ بہار کے

    سُرُور بارہ بنکوی
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 9, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
  2. صائمہ شاہ

    صائمہ شاہ محفلین

    مراسلے:
    4,659
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Cool
    یہی رُت ہے عِشرتِ دِید کی، یہی دِن ہیں آمدِ یار کے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر