ردیف ے حصہ اوّل - غزلیں 161- 175

تفسیر نے 'غالبیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 29, 2006

  1. تفسیر

    تفسیر محفلین

    مراسلے:
    3,088
    .
    صفحہ اول​


    فہرست تبصرہ غزلیات
    ردیف ے حصہ اوّل - غزلیں 161- 175


    161 ۔ صد جلوہ رو بہ رو ہے جو مژگاں اٹھائیے
    162 ۔ مسجد کے زیرِ سایہ خرابات چاہیے
    ق
    سر پائے خم پہ چاہیے ہنگامِ بے خودی
    163۔ بساطِ عجز میں تھا ایک دل یک قطرہ خوں وہ بھی
    164 ۔ ہے بزمِ بتاں میں سخن آزردہ لبوں سے
    165۔ تا ہم کو شکایت کی بھی باقی نہ رہے جا
    166 ۔ گھر میں تھا کیا کہ ترا غم اسے غارت کرتا
    167۔ غمِ دنیا سے گر پائی بھی فرصت سر اٹھانے کی
    168 ۔ حاصل سے ہاتھ دھو بیٹھ اے آرزو خرامی
    169 ۔کیا تنگ ہم ستم زدگاں کا جہان ہے
    170 ۔ درد سے میرے ہے تجھ کو بے قراری ہائے ہائے
    171 - سر گشتگی میں عالمِ ہستی سے یاس ہے
    172۔ گر خامشی سے فائدہ اخفائے حال ہے
    173۔ تم اپنے شکوے کی باتیں نہ کھود کھود کے پوچھو
    174 ۔ ایک جا حرفِ وفا لکّھا تھا، سو بھی مٹ گیا
    175 ۔ پینس میں گزرتے ہیں جو کوچے سے وہ میرے


    صفحہ اول​


    ردیف الف - غزل 1 تا 15

    ردیف الف ۔ غزل 16 تا 30

    ردیف الف ۔ غزل 31 تا 45

    ردیف الف ۔ غزل 46 تا 60

    ردیف ب تا چ - غزل 61 تا 69

    ردیف د تا ز - غزل 70 تا 87

    ردیف س تا گ - غزل 88 تا 97

    ردیف ل تا م - غزل 98 تا 102

    ردیف ن حصہ اول - غزل103 تا 118

    ردیف ن حصہ دوئم - غزل 119 تا 131

    ردیف ن حصہ سوئم - غزل 132 تا 142

    ردیف و - غزل 143 تا 155

    ردیف ھ - غزل 156 تا 160

    ردیف ے اول - غزل 161 تا 175

    ردیف ے دوئم - غزل 176 تا 190

    ردیف ے سوئم - غزل 191 تا 205

    ردیف ے چہارم - غزل 206 تا 220

    ردیف ے پنجم- غزل221 تا 235

    ردیف ے ششم ۔غزل 236 تا 250

    ردیف ے ہفتم - غزل 251 تا 265

    ردیف ے ہشتم - غزل 266 تا 274

    .
     

اس صفحے کی تشہیر