ردیف ن حصہ سوئم - غزلیں 132 تا 142

تفسیر نے 'غالبیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 29, 2006

  1. تفسیر

    تفسیر محفلین

    مراسلے:
    3,088
    .
    صفحہ اول​


    فہرست تبصرہ غزلیات
    ردیف ن حصہ سوئم - غزلیں 132 تا 142


    132 ۔ نہیں ہے رخم کوئی بخیے کے درخُور مرے تن میں
    133 ۔ مزے جہان کے اپنی نظر میں خاک نہیں
    134 ۔ دل ہی تو ہے نہ سنگ و خشت، درد سے بھر نہ آئے کیوں؟
    135 ۔ غنچۂ ناشگفتہ کو دور سے مت دکھا، کہ یُوں
    136 ۔ ہم بے خودئ عشق میں کر لیتے ہیں سجدے
    137 ۔ اپنا احوالِ دلِ زار کہوں یا نہ کہوں
    138 ۔ ممکن نہیں کہ بھول کے بھی آرمیدہ ہوں
    139 ۔ جس دن سے کہ ہم خستہ گرفتارِ بلا ہیں
    140 ۔میر کے شعر کا احوال کہوں کیا غالب
    141 ۔مے کشی کو نہ سمجھ بےحاصل
    142 ۔دھوتا ہوں جب میں پینے کو اس سیم تن کے پاؤں


    صفحہ اول​


    ردیف الف - غزل 1 تا 15

    ردیف الف ۔ غزل 16 تا 30

    ردیف الف ۔ غزل 31 تا 45

    ردیف الف ۔ غزل 46 تا 60

    ردیف ب تا چ - غزل 61 تا 69

    ردیف د تا ز - غزل 70 تا 87

    ردیف س تا گ - غزل 88 تا 97

    ردیف ل تا م - غزل 98 تا 102

    ردیف ن حصہ اول - غزل103 تا 118

    ردیف ن حصہ دوئم - غزل 119 تا 131

    ردیف ن حصہ سوئم - غزل 132 تا 142

    ردیف و - غزل 143 تا 155

    ردیف ھ - غزل 156 تا 160

    ردیف ے اول - غزل 161 تا 175

    ردیف ے دوئم - غزل 176 تا 190

    ردیف ے سوئم - غزل 191 تا 205

    ردیف ے چہارم - غزل 206 تا 220

    ردیف ے پنجم- غزل221 تا 235

    ردیف ے ششم ۔غزل 236 تا 250

    ردیف ے ہفتم - غزل 251 تا 265

    ردیف ے ہشتم - غزل 266 تا 274

    .
     

اس صفحے کی تشہیر