1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

راتوں سے گھنی ان زلفوں سے مر مر سے سبک ان ہاتھوں میں !

یونس رضا نے 'آپ کی نثری شاعری بحور سے آزاد' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 31, 2008

  1. یونس رضا

    یونس رضا معطل

    مراسلے:
    1,732
    ہم تیرے حسن کی ہیبت میں بس چاند کو تکتے جاتے ہیں
    اور رات گزرتی جاتی ہے تارے بھی سرکتے جاتے ہیں

    ہم ذات کے اس مے خانے سے ہم اس آئینہ خانے سے
    پیالہ ہیں چھلکتے جاتے ہیں چہرہ ہیں جھلکتے جاتے ہیں

    اپنی ہی طلب کی حدت سے اپنی ہی پیاس کی شدت سے
    کاسہ ہیں چٹختے جاتے ہیں کوزہ ہیں درکتے جاتے ہیں

    اپنی ہی نوا میں جل جل کر اپنے ہی لہو میں دھل دھل کر
    کندن ہیں دمکتے جاتے ہیں موتی ہیں چمکتے جاتے ہیں

    ہر صبح ہم اپنی جلوت میں ہر شام ہم اپنی خلوت میں
    خوشبو سا مہکتے جاتے ہیں شعلہ سا دہکتے جاتے ہیں

    راتوں سے گھنی ان زلفوں سے مر مر سے سبک ان ہاتھوں میں
    آنچل ہیں سرکتے جاتے ہیں گجرا ہیں مہکتے جاتے ہیں

    وہ لہر گئی بچپن بھی گیا اس ہاتھ سے وہ دامن بھی گیا
    اب اپنی آنکھ کا آنسو ہیں مٹی میں ڈھلکتے جاتے ہیں

    وہ عمر خلش کی بیت گئی جب عشق میں کوئی غیر بھی تھا
    اب یوں ہے کہ اپنے دل میں ہم خود آپ کھٹکتے جاتے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. باسم

    باسم محفلین

    مراسلے:
    1,767
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    بہت عمدہ نظم ہے
    مگر آپ کا بلاگ بہت عرصہ سے سونا پڑا ہے
     
  3. ابن سعید

    ابن سعید خادم

    مراسلے:
    60,142
    ڈاکٹر صاحب آپ کے تخیل میں مجھے کبھی کلام نہیں رہا۔ اس وقت بھی نہیں جب آپ کے اشعار نظروں سے نہیں گزرے تھے بلکہ فقط آپ کے بلاگ پر چند طویل مضامین سے ناطہ تھا۔

    خیر شاعری تو میرے لئے ہمیشہ بڑی چیز رہی ہاں تک بندیوں سے کچھ حد تک رابطہ رہا ہے میرا۔ علم عروض سے کورا ہوں پر "ابے کھٹ کھٹ" سے کام چلا لیتا ہوں۔ ایک بار استاذان محفل میں کچھ ایطا کی بات چلی تھی۔ پتہ نہیں مجھے کتنی سمجھ میں آئی تھی پر مجھے لگتا ہے کہ آپ کے ان اشعار میں ایطا ضرور ہے۔ اگر مجھے سمجھنے میں غلطی نہیں ہوئی ہے۔ اور ہاں "اپنی ہی پیاس کی شدت سے" میں پیاس کے آس پاس کچھ وزن کھٹک رہا ہے مجھے۔ اساتذہ بہتر بتا سکیں گے۔

    ایک بات اور میں ذرا "دو رنگی چھوڑ دے اک رنگ ہوجا" قسم کا آدمی ہوں اس لئے خواہ شاعری ہو خواہ مصوری اس میں یکسانیت پسند کرتا ہوں لہٰذا ذاتی طور پر جہاں ہر شعر کے دوسرے مصرعے میں تکرار پسند آئی وہیں اخیر کے دو اشعار میں ان کی کمی شدت سے کھلی۔ :)

    ویسے اشعار لاجواب ہیں۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,619
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    درست ہے سعود۔۔ عروض کا کوئ مسئلہ نہیں اس غزل میں۔
    اچھی غزل ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. یونس رضا

    یونس رضا معطل

    مراسلے:
    1,732

    آپ کے رائے سر آنکھوں پر ۔۔۔۔۔۔ شکریہ صاحب:)
     
  6. یونس رضا

    یونس رضا معطل

    مراسلے:
    1,732
    آپ کے الفاظ تو میرے لئے ویسے بھی قیمتی ہوتے ہیں سرکار ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بس سمجھیں ہم نے بیعت کر ہی لی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ :)
     
  7. یونس رضا

    یونس رضا معطل

    مراسلے:
    1,732
    کیا کریں باسم بھائی۔۔۔۔۔۔۔۔ اب سوچ رہا ہوں کہ اسٹارٹ کر ہی دوں
     
  8. زینب

    زینب محفلین

    مراسلے:
    11,211
    بہت زبردست غزل کہی آپ نے ڈاکٹر صاحب بہت خوب
     
  9. یونس رضا

    یونس رضا معطل

    مراسلے:
    1,732
    پسندیدگی کا شکریہ زینب ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ :)
     
  10. زینب

    زینب محفلین

    مراسلے:
    11,211
    میں یہاں سے چوری کر کے اپنے بلاگ پے لے جاؤں۔۔۔۔۔۔بہت اچھی لگی مجھے اپ کی غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  11. پیاسا

    پیاسا معطل

    مراسلے:
    179
    بہت اجھا ہے
     

اس صفحے کی تشہیر