پروین شاکر :::::: دُنیا کو تو حالات سے اُمّید بڑی تھی :::::: Parveen Shakir

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 13, 2017

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm



    [​IMG]

    غزل
    دُنیا کو تو حالات سے اُمّید بڑی تھی
    پر چاہنے والوں کو جُدائی کی پڑی تھی

    کِس جانِ گُلِستاں سے یہ ملِنے کی گھڑی تھی
    خوشبوُ میں نہائی ہُوئی اِک شام کھڑی تھی

    میں اُس سے ملی تھی کہ خُود اپنے سے مِلی تھی
    وہ جیسے مِری ذات کی گُم گشتہ کڑی تھی

    یُوں دیکھنا اُس کو کہ کوئی اور نہ دیکھے !
    انعام تو اچّھا تھا ، مگر شرط کڑی تھی

    کم مایہ تو ہم تھے مگر احساس نہ ہوتا !
    آمد تِری اِس گھر کے مُقدّر سے بڑی تھی

    میں ڈھال لیے سمتِ عدُو دیکھ رہی تھی !
    پلٹی ، تو مِری پُشت پہ تلوار گڑی تھی

    پروین شاکر
     
    آخری تدوین: ‏جولائی 13, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
  2. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    8,664
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    خوبصورت کلام۔ شریک کرنے پر شکریہ قبول فرمائیے
     
    • زبردست زبردست × 1
  3. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    بہت نوازش خلیل الرحمٰن بھائی
    :) :)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر