دلچسپ و عجیب

فہیم

لائبریرین
نیوٹن کا ایک دانت 3556 ڈالر میں بکا


نیوٹن کا ایک دانت شیفٹیلزی بری نے 1816ء میں 3556 ڈالر میں خریدا تھا۔

روس میں چمڑے کے سکے کرنسی کے طور پر


آپ نے ہمایوں بادشاہ کے دور میں نظام سقہ کا واقعہ تو ضرور پڑھا ہوگا۔ جس نے ایک دن کی بادشاہت پاکر چمڑے کے سکے جاری کرادیے تھے۔
لیکن یہ بات بھی ایک حقیقت ہے کہ روس میں تیرہویں صدی عیسوی سے سترہویں صدی عیسوی تک چمڑے کے سکے استعمال ہوئے تھے۔



امریکی صدر جس نے اپنے دورِ صدارت میں
کسی سے مصحافہ نہیں کیا


کسی بھی ملک کے سربراہ کو روزانہ کسی نہ کسی سے ملنا ہوتا ہے اور کبھی وہ بہت سے لوگوں سے ملتا ہے اور ملنے پر عام طور پر ہاتھ بھی ملانا ہوتا ہے لیکن یقین کریں کہ سابق امریکی صدر جارج واشنگٹن (1732ء تا 1799ء) نے اپنے دورِ صدارت میں کسی سے مصافحہ نہیں کیا،
نہ جانے کیوں؟
 

فہیم

لائبریرین
یہ لوگ بھی کبھی معمولی تھے


آپ یقین کریں یا نہ کریں لیکن یہ حقیقت ہے کہ شمالی ویت نام کے آنجہانی صدر ہوچی منہ ایک جہاز کے قلی تھے۔

کرسٹوفر کولمبس جس نے امریکہ دریافت کیا ایک جولاہے کا لڑکا تھا۔

جدید ترکی کے بانی کمال اتا ترک ایک معمولی کلرک کے بیٹے تھے۔

حکیم لقمان بچپن میں موم بتیاں بناتے تھے۔

ناصر الدین بادشاہ بچپن میں ٹوپیاں بیچا کرتے تھے۔

روس کا سابق ڈکٹیٹر اسٹالن ایک موچی کے گھر میں پیدا ہوا۔

فرانس کا مشہور حکمراں نپولین ابتدا میں ایک معمولی سپاہی تھا۔

مشہور سائنسدان تھامس الوا ایڈیسن ایک معمولی اخبار فروش تھا۔

نادر شاہ ابتدا میں ایک گڈریا تھا۔

فرانس کی مشہور ملکہ جوزیفائن ایک معمولی تمباکو فروش کی بیٹی تھی۔

اٹلی کا سابق ڈکٹیٹر مسولینی ایک غریب لوہار کا بیٹا تھا۔

امریکہ ہی کے ایک اور صدر ابراہم لنکن ایک غریب کسان کے بیٹے تھے۔

برصغیر کے پہلے مسلمان بادشاہ قطب الدین ایبک شروع میں ایک غلام تھے۔

روس کی مشہور ملکہ کیتھرائن فوج میں ایک معمولی خادمہ تھی۔

جمہوریہ گانگو کے پہلے وزیرِ اعظم لومبا ابتدا میں ایک معمولی کلرک تھے۔

سقراط بچپن میں ایک سنگ تراش تھا۔

فیریڈی نائیکل بھی ایک معمولی جلد ساز تھا۔

روس کے سابق وزیرِ اعظم کمیتا خروشیف ایک مزدور گھرانے میں پیدا ہوئے، انہوں نے ابتدا میں مویشی چَرائے اور ایک معمولی لوہار کی حیثیت سے کام کیا۔

مشہور انگریز ادیب تھامس کارلائیل ایک بڑھئی و کسان کے گھر پیدا ہوا۔

مشہور انگریز سائنس دان مائیل فیراڈے لندن کے مضافات میں ایک غریب لوہار کے گھر پیدا ہوا۔

مشہور امریکی مدبر، مصنف اور سائنسدان بنجمن فرینکلن بوسٹن میں ایک غریب والدین کے گھر پیدا ہوا۔

مشہور سائنس دان جان کپلر بھی جرمنی کے ایک غریب گھرانے میں پیدا ہوا تھا۔
 

فہیم

لائبریرین
مشہور سائنس دان جان ڈالٹن رنگ کور تھا


مشہور انگریز سائنس دان جان ڈالٹن (1766ء تا 1844ء) جس نے سب سے پہلے جوہری اوزان کا جدول تیار کرنے کی کوشش کی تھی۔ اس نے ہائیڈروجن کے ذرے کو اکائی قرار دے کر جوہری اوزان قائم کیے تھے۔ مشہور ڈالٹن تھیوری پیش کی تھی۔ اور دیگر بہت سی مشہور ایجادیں اور دریافتیں کی تھیں۔ رنگ کور یعنی کلر بلائنڈز تھا۔ اس لیے اسی نام پر آج کلر رنگ کوری کو "ڈالٹینٹ" کے نام سے پکارا جاتا ہے۔
 

سیما علی

لائبریرین
نوجوان نے وفاداری ثابت کرنے کیلئے اپنے دانتوں کا ہار بناکر محبوبہ کو دیدیا
Published On 15 November,2021 10:28 pm

لاہو:(ویب ڈیسک)محبت ایک ایسی چیز ہے کہ جو انسان کو سدھار بھی دیتی ہے اور ناکام محبت کی وجہ سے کچھ افراد اپنی جان دینے سے بھی گریز نہیں کرتے ہیں جبکہ دنیا میں محبت کے ہاتھوں مجبور ہوکر عجیب و غریب کام کرنے والوں کی بھی کوئی کمی نہیں ہے۔


cY86pXA.jpg
 

سیما علی

لائبریرین
پرتگال: دفتری اوقات کے بعد ملازمین سے رابطہ کرنے پر کمپنیوں کو جرمانہ، قانون منظور
Published On 20 November,2021 05:21 pm

لزبن: (ویب ڈیسک) یورپی ملک پرتگال سے ایک حیران کن خبر نے سب کو ششدر کر دیا ہے جہاں پر گزشتہ روز ایک ایسے قانون کو منظور کیا گیا ہے جس کے تحت ان کمپنیوں پر جرمانے ہوں گے جو اپنے ملازمین سے دفتری اوقات کے بعد کام کے لیے رابطہ کریں گی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پرتگال کے پارلیمان سےمنظور ہونے والے قانون میں کمپنیاں ورکرز کو ریموٹ ورکنگ یعنی گھر سے کام کرنے کے دوران بجلی اور انٹرنیٹ کے اضافی بل دینے کی بھی پابند ہوں گی۔
مبصرین کے مطابق اس قانون سازی سے پرتگال میں ورکرز اپنے دفتری امور اور گھریلو معاملات کو متوازن کر سکیں گے۔ برسرِ اقتدار سوشلسٹ پارٹی کا مؤقف ہے کہ یہ قانون سازی کورونا کے سبب گھروں سے کام کرنے کی وجہ سے کی گئی ہے۔ پرتگال کے لیبر قوانین میں ان ترامیم کا اطلاق ان کمپنیوں پر نہیں ہو گا جن میں ورکرز کی تعداد 10 سے کم ہے۔ نئی ترامیم کے مطابق کمپنیوں کو ورکرز کے گھروں سے کام کے دوران ان کی نگرانی سے بھی روک دیا گیا ہے۔
پرتگال کے اراکینِ پارلیمنٹ نے دفتری اوقات کے بعد کام سے متعلق پیغامات ملنے کے سلسلے کو منقطع کرنے اور دفتری آلات کو بند کرنے کا حق دینے سے متعلق ترامیم منظور نہیں کیں۔
نئی قانون سازی کے تحت اب کمپنیوں کو وہ اخراجات بھی ادا کرنے ہوں گے جو ملازمین کو دور دراز سے کام کرنے کی وجہ سے ادا کرنے پڑتے ہیں جن میں بجلی کا بل اور انٹرنیٹ کے اخراجات شامل ہیں۔ کمپنیاں ان اخراجات کو کاروباری اخراجات کے طور پر لکھ سکتی ہیں۔
نئے قوانین چھوٹے بچوں کے والدین کے لیے بھی مثبت خبر کے طور پر دیکھے جا رہے ہیں جن کو اب گھروں سے کام کرنے کے لیے اپنے آجر سے ایڈوانس میں اجازت نہیں لینی ہو گی۔ یہ اجازت ان ملازمین کے لیے ہوگی جن کے بچے آٹھ برس سے کم عمر کے ہیں۔
ان قوانین میں گھروں سے کام کرنے کے دوران تنہائی سے نمٹنے کے اقدامات بھی شامل ہیں۔ کمپنیوں کے حکام سے توقع کی گئی ہے کہ وہ کم از کم ہر دو ماہ بعد اپنے ورکرز سے ملاقاتیں کریں گے۔ یورپ میں پرتگال پہلا ملک ہے جس نے کورونا وبا کے دوران رواں سال جنوری سے ریموٹ ورکنگ کے قوانین تبدیل کیے ہیں۔
پرتگال کے لیبر اور سوشل سکیورٹی کے وزیر انا مینڈس گوڈینو نے گزشتہ ہفتے ایک آن لائن کانفرنس میں کہا تھا کہ وبا کے سبب بہت سے لوگوں کے لیے بہت سی آسانیاں ہوئی ہیں البتہ کچھ لوگوں کی آئی ٹی سامان تک غیر مساوی رسائی ہونے سے ظاہر ہوتا ہے کہ حکومتی کو اس سلسلے میں کچھ کرنا چاہیے۔

 
Top