1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

جگر حیرت عشق نہیں شوق جنوں گوش نہیں

بلال جلیل نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 7, 2015

  1. بلال جلیل

    بلال جلیل محفلین

    مراسلے:
    128
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy

    حیرت عشق نہیں شوق جنوں گوش نہیں

    بے حجابانہ چلے آؤمجھے ہوش نہیں

    رند جو مجھ کو سمجھتے ہیں انہیں ہوش نہیں

    میں گدا ساز ہوںمیں گدا فرموش نہیں

    کہہ گئی کان میں آ کر تیرے دامن کی ہوا

    صاحب ہوش وہی ہے کہ جیسے ہوش نہیں

    کبھی ان مدھ بھری آنکھوں سے پیا تھا اک جام

    آج تک ہوش نہیں ہوش نہیں ہوش نہیں

    محو تسبیح تو سب ہیں مگر ادراک کہاں

    زندگی خود ہی عبادت ہےمگر ہوش نہیں

    مل کے جس دن سے گیا کوئی ایک بار جگر

    مجھ کو یہ وہم ہےجیسے میرا آغوش نہیں


    جگر مراد آبادی​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. بلال جلیل

    بلال جلیل محفلین

    مراسلے:
    128
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    کلام : جگر مرادآبادی
    بزبان : استاد بہاوالدین و ہمنوا

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر