1. اردو محفل سالگرہ شانزدہم

    اردو محفل کی سولہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

برہمن، حضرت عیسٰی کا گدھا اور مکہ

محمد وارث نے 'علمی و ادبی لطیفے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 19, 2008

  1. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    مغل بادشاہ اورنگزیب عالمگیر کو اپنی بیٹی زیب النساء کیلئے استاد درکار تھا۔ یہ خبر سن کر ایران اور ہندوستان کے مختلف علاقوں سے بیسیوں قادر الکلام شاعر دہلی آگئے کہ شاید قسمت یاوری کرے اور وہ شہزادی کے استاد مقرر کر دیئے جائیں۔

    ان ایام میں دہلی میں اس زمانہ کے نامور شاعر برہمن اور میر ناصر علی سرہندی بھی موجود تھے۔ نواب ذوالفقار علی خان، ناظمِ سرہند کی سفارش پر برہمن اور میر ناصر کو شاہی محل میں اورنگزیب کے روبرو پیش کیا گیا۔ سب سے پہلے برہمن کو اپنا کلام سنانے کا حکم ہوا، برہمن نے تعمیلِ حکم میں جو غزل پڑھی، اسکا مقطع تھا۔

    مرا دلیست بکفر آشنا کہ چندیں بار
    بکعبہ بُردم و بازم برہمن آوردم

    (میرا دل اسقدر کفر آشنا ہے کہ میں جب بھی کعبہ گیا، برہمن کا برہمن ہی واپس آیا۔)

    گو یہ محض شاعرانہ خیال تھا اور تخلص کی رعایت کے تحت کہا گیا تھا لیکن عالمگیر انتہائی پابند شرع اور سخت گیر بادشاہ تھا، اسکی تیوری چڑھ گئی اور وہ برہمن کی طرف سے منہ پھیر کے بیٹھ گیا۔

    میر ناصر علی نے اس صورتِ حال پر قابو پانے کیلئے اٹھ کر عرض کی کہ جہاں پناہ اگر برہمن مکہ جانے کے باوجود برہمن ہی رہتا ہے تو اس میں حیرت کی کوئی بات نہیں، شیخ سعدی بھی تو یہی کہہ گئے ہیں۔۔

    خرِ عیسٰی اگر بمکہ رود
    چوں بیاید ہنوز خر باشد

    (عیسٰی کا گدھا اگر مکہ بھی چلا جائے وہ جب واپس آئے گا، گدھے کا گدھا ہی ہوگا۔)

    عالمگیر یہ شعر سن کر خوش ہوگیا اور برہمن کو معاف کردیا۔
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 10, 2016
    • پسندیدہ پسندیدہ × 12
    • پر مزاح پر مزاح × 8
    • زبردست زبردست × 7
  2. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    حضور کا اقبال بلند ہو۔۔
    کیا بات ۔۔۔ ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔واہ
    لگتا ہے ۔۔ مزاج ۔۔ جمالیاتی حس زوروں پر اور کام سے فراغت ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    23,492
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    بہت خوب وارث بھائی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ مغل صاحب اور احمد صاحب!
     
  5. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,872
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    اچھا لطیفہ ہے وارث صاحب شاید میں نے اسی لطیفے پر ون اردو پر لکھا تھا کہ اس لطیفے سے اورنگزیب عالمگیر کا علمی قد بھی واضح ہو گیا کہ جہاں پناہ اتنے عالموں کے بیچ میں رہ کر بھی جاہل ہی رہے اور اسی لیے ایسٹ انڈیا کمپنی نے برصغیر پر قبضہ قائم کیا - :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  6. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ فرخ صاحب۔

    اس سے ملتے جلتے کسی لطیفے پر لکھا ہوگا آپ نے شاید! :)

    عالمگیر، بذاتِ خود عالم فاضل آدمی تھا، لیکن حد سے زیادہ سخت اور شقی القلب تھا، باپ کو زندہ درگور کر دیا اور کئی بھائیوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ عیاش تو عالمگیر کے باپ دادا بھی تھے لیکن اسکی اولاد نے تو الامان انتہا کر دی تھی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
  7. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    بے شک ایسا ہی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. خرم

    خرم محفلین

    مراسلے:
    2,294
    اور مزے کی بات ہے کہ انہیں پابند شرع لکھا جاتا ہے۔ یہ اپنے آپ میں ایک لطیفہ ہے :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 2
  9. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    عالمگیر شاید تھا پابند شرع بھی اور مغل حکمرانوں میں واحد استشنا بھی لیکن سیاست و حکومت میں وہ بھی اسی پالیسی کا معتقد تھا جو مسلمانوں میں بہت اوائل سے رائج پا گئی تھی!
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  10. خرم

    خرم محفلین

    مراسلے:
    2,294
    بھیا شریعت صرف نماز روزہ تو نہیں۔ زندگی کا ہر پہلو اس کا پابند ہے۔ صرف نماز پڑھ کر جو جی چاہا کرلیا، یہ پابندگی شرع تھوڑا ہی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 1
  11. محمد ابراہیم خان افغان

    محمد ابراہیم خان افغان محفلین

    مراسلے:
    48
    جھنڈا:
    Pakistan
    وارث صاحب، السلام علیکم! مذکورہ شعر کا ترجمہ اگر یوں ہوتا تو کیا الفاظ کی اور زیادہ ترجمانی نہ ہوجاتی؟

    میرا ایک دل ہے کفر آشنا کہ اسے (یعنی اپنے دل کو) کئی بار کعبہ لے چلا مگر تب بھی برہمن کا برہمن ہی واپس لایا

    آپ کا ترجمہ یہ تھا:

    میرا دل اسقدر کفر آشنا ہے کہ میں جب بھی کعبہ گیا، برہمن کا برہمن ہی واپس آیا
    معذرت کے ساتھ۔
     
  12. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    آپ ایسے ہی سمجھ لیں محترم۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. محمد ابراہیم خان افغان

    محمد ابراہیم خان افغان محفلین

    مراسلے:
    48
    جھنڈا:
    Pakistan
    کیا اس پر کوئی معتبر تاریخی شہادت موجود ہے؟؟یا ان الفاظ کا مَحمَل مجازی ہے۔ ذرا وضاحت درکار ہے۔
     
  14. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    شاہجہان کو قید میں ڈالنا زندہ در گور کرنا ہی تھا۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
  15. محمد ابراہیم خان افغان

    محمد ابراہیم خان افغان محفلین

    مراسلے:
    48
    جھنڈا:
    Pakistan
    یعنی ان الفاظ کا مَحمَل مجازی تھا۔ آپ کے الفاظ سے کچھ ایسا تاثر مل رہا تھا جیسے انہوں نے حقیقۃً ایسا کیا ہو۔ باقی یہ تو ذوق ذوق کی بات ہے، کوئی اس کو زندہ درگور کرنے یا زندہ نذر آتش کرنے سے تعبیر کرے تو کون تعرض کرے۔ البتہ تاریخی حقایق شاعرانہ رنگ میں نہیں لانے چاہیے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  16. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    راج برطانیہ معزول بادشاہوں کو ملک بدر کر دیتے تھے۔ مسلمان حکمرانوں کی طرح قتل نہیں کرتے تھے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    باپ سمجھ کر تھوڑی عزت کر لی ہوگی کہ زندہ قبر میں ڈالنے کی بجائے زندہ حبس خانے میں ڈال دیا۔ ورنہ بادشاہوں سے بعید تو اول حرکت بھی نہیں ہے۔ اور پہلی سے کم دوسری بھی نہیں ہے۔
     
    • متفق متفق × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  18. محمد اسلم

    محمد اسلم محفلین

    مراسلے:
    701
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Sleepy
    ہمیں تو لگتا ہے اورنگزیب غریبوں کے بڑے طرفدار تھے،،، اور ہاں ،، خود بھی غریب تھے، ٹوپیاں سی سی کر ،، قرآن کی کتابت کر کر،،، اپنا گھر(محل) چلاتے تھے۔ خیر ! تو غریبوں کی طرفداری میں، یعنی غریبوں کا مذاق اُڑانے کی پاداش میں انھیں یہ سزا ملی۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  19. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    27,164
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    کس کو سزا ملی کیا کہنا چاہ رہے ہیں جناب۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  20. محمد اسلم

    محمد اسلم محفلین

    مراسلے:
    701
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Sleepy
    واہ! کیا آپ کو پتہ نہیں ہم غریبوں کی محبت کا مذاق کس نے اُڑایا تھا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 3

اس صفحے کی تشہیر