1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

ایک غزل،'' منہ سے نکلی تھی، کہاں بات گئی ہے دیکھو ''

محمد اظہر نذیر نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 18, 2012

  1. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    منہ سے نکلی تھی، کہاں بات گئی ہے دیکھو
    بات ہی بات میں، کب رات گئی ہے دیکھو
    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    ہجر کم بخت میں برسات گئی ہے دیکھو
    وصل کی شب، کہ جو آئی تھی ملانے ہم کو
    دے جدائی کی یہ سوغات گئی ہے دیکھو
    کوئی افسوس نہیں، ہار گیا ہوں لیکن
    اک سبق دے کے ہی پھر مات گئی ہے دیکھو
    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر وہ، جوابات گئی ہے دیکھو
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    بہت شکریہ جناب شمشاد صاحب
     
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,644
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    کاپی پیسٹ کر لی ہے۔ لیکن یہ میں اکثر کہہ چکا ہوں کہ زمینیں ایسی مشکل نہ نکالا کرو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    جی اُستاد محترم جو جیسا وارد ہوتا میں پیش کر دیتا ہوں
     
  5. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    کچھ تبدیلی معمولی سی :angel:
    منہ سے نکلی تھی، کہاں بات گئی ہے دیکھو
    بات ہی بات میں، کب رات گئی ہے دیکھو
    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    ہجر کم بخت میں برسات گئی ہے دیکھو
    وصل کی شب، کہ جو آئی تھی ملانے ہم کو
    دے جدائی کی یہ سوغات گئی ہے دیکھو
    کوئی افسوس نہیں، ہار گیا ہوں لیکن
    اک سبق دے کے ہی پھر مات گئی ہے دیکھو
    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر کو، جوابات گئی ہے دیکھو
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,644
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    حاضر ہے

    منہ سے نکلی تھی، کہاں بات گئی ہے دیکھو
    بات ہی بات میں، کب رات گئی ہے دیکھو
    //درست۔ اگرچہ مجھے زمین پسند نہیں آئی ہے۔ خواہ مخواہ کرتب بازی دکھانی پڑے گی اس میں۔ اس کو یوں کیوں نہ کر دیا جائے جس سے رواں ہو جائیں یہ اشعار
    منہ سے نکلی تھی، کہاں بات چلی جائے گی
    بات ہی بات میں، کب رات چلی جائے گی
    مرے خیال میں ’چلی جائے گی‘ ردیف ہر شعر میں درست ثابت ہو گی اور رواں بھی۔

    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    ہجر کم بخت میں برسات گئی ہے دیکھو
    //کم بخت برسات کو کہا جائے گا یا ہجر کو؟ اگر چلی جائے گی‘ ردیف ہی رکھی جائے تو اس طرح اصلاح ہو سکتی ہے۔
    کیا جدائی میں ہی برسات چلی جائے گی؟

    وصل کی شب، کہ جو آئی تھی ملانے ہم کو
    دے جدائی کی یہ سوغات گئی ہے دیکھو
    //وصل کی شب ظاہر ہے ملانے کے لئے ہی آئی ہو گی۔ اس کی جگہ یوں کہا جائے تو بہتر ہے
    وصل کی شب بھی جب آئی تھی ، کہاں تھی یہ خبر
    دے کے وہ ہجر کی سوغات چلی جائے گی

    کوئی افسوس نہیں، ہار گیا ہوں لیکن
    اک سبق دے کے ہی پھر مات گئی ہے دیکھو
    //ذرا بات واضح ہو جائے اگر یوں کہا جائے
    آج میں ہار گیا، اس کا کوئی غم کیوں ہو
    اک سبق دے کے ہی یہ مات چلی جائے گی


    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر وہ، جوابات گئی ہے دیکھو
    //یہاں بھی ’چلی جائے گی‘ ردیف ہی زیادہ مناسب ہے۔

    ڈوبتا جارہا ہے من، دیکھو
    ہے شکستہ مرا بدن، دیکھو
    // شعر دو لخت لگ رہا ہے۔ من ڈوبنے کا بدن کی شکستگی سے تعلق؟

    کوئی گُل چیں یہاں سے گزرا ہے
    اُجڑا اُجڑا سا ہے چمن دیکھو
    //درست

    ہاں، گُھٹن ہے، چَہَار سو لیکن
    چل رہی ہے ابھی پَوَن دیکھو
    //ویسے درست ہے، لیکن فیکچوال غلطی ضرور ہے، پون چل رہی ہو گی تو گھٹن کیوں؟

    آگ بھڑکے گی ایک دن لازم
    میرے سینے میں ہے اگن، دیکھو
    //درست۔ اگرچہ ’اگن‘ قافیے کا استعمال مجھے پسند نہیں۔ ایسے الفاظ بالی ووڈ کے گانوں کی یاد دلاتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    منہ سے نکلی تھی، کہاں بات چلی جائے گی
    بات ہی بات میں، کب رات چلی جائے گی
    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    کیا جدائی میں ہی برسات چلی جائے گی
    آج میں ہار گیا، اس کا نہیں غم کوئی
    اک سبق دے کے ہی یہ مات چلی جائے گی
    وصل کی شب بھی جو آئی تھی، پتہ کس کو تھا
    دے کےوہ ہجر کی سوغات چلی جائے گی
    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر وہ، جوابات چلی جائے گی
     
  8. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    منہ سے نکلی تو کہاں بات چلی جائے گی
    بات ہی بات میں پھر رات چلی جائے گی
    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    کیا جدائی میں ہی برسات چلی جائے گی
    آج میں ہار گیا، اس کا نہیں غم کوئی
    اک سبق دے کے ہی یہ مات چلی جائے گی
    وصل کی شب بھی جو آئی تھی، پتہ کس کو تھا
    دے کےوہ ہجر کی سوغات چلی جائے گی
    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر وہ، جوابات چلی جائے گی
     
  9. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    آپ کی تجویز کردہ تبدیلیاں اُستاد محترم من و عن​
    منہ سے نکلی تو کہاں بات چلی جائے گی
    بات ہی بات میں پھر رات چلی جائے گی
    خشک موسم تو کٹے ہجر میں جیسے تیسے
    کیا جدائی میں ہی برسات چلی جائے گی
    آج میں ہار گیا، اس کا نہیں غم کوئی
    اک سبق دے کے ہی یہ مات چلی جائے گی
    وصل کی شب بھی جو آئی تھی، پتہ کس کو تھا
    دے کےوہ ہجر کی سوغات چلی جائے گی
    بے رخی اُس کی سوالات لئے آئی تھی
    دے کے اظہر وہ، جوابات چلی جائے گی
     

اس صفحے کی تشہیر