اپنے کمپیوٹر کو سمجھیں ۔ ( پہلا حصہ )

ریحان نے 'ٹیکنیکل مضامین' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 8, 2009

  1. ریحان

    ریحان محفلین

    مراسلے:
    209

    [​IMG]



    اپنے کمپیوٹر کو سمجھیں ؟ اس سے کیا مراد ہو گی کے کمپیوٹر کو کیا سمجھنا کیوکے وہ تو پروگرام کو چلا رہا ہے تو پروگرامز کو سمجھنا چاہیے نا !!! بلکل ٹھیک مگر ۔۔ ہم جتنا اپنے کمپیوٹر کو اس کے آپریٹنگ سسٹم کی مد میں اپنے کنٹرول میں رکھ کر سمجھ رہے ہوں گے اتنا ہم اپنے پروگرامز کو اپنی من مرضی سے چلا بھی رہے ہوگے ۔


    کچھ سمجھ نہیں آیا ؟ چلیں میں تھوڑا اسے اور سمپل کرتا ہو

    ( ونڈوز آپریٹنگ سسٹم کے یوزر اس آرٹیکل میں موجود انفارمیشن کو استعمال میں لاکر آپ اپنے سسٹم کی رفتار و سٹیبلٹی کو کنٹرول میں رکھ سکتے ہیں ۔۔ یہ سبجیکٹ بہت ضروری ہے میں اسے دو تحریری حصوں میں بیا کروگا ۔۔ پہلے حصہ میں آپ کا کنٹرول آپ کے کمپوٹر پر ممکن بنانا چاہوگا ۔۔ اور دوسرے آرٹیکل میں ان سافٹ وئیرز کے رویو لکھوگا جو آپ کے کمپیوٹر کی صحت کو سالوں سال برقرار رکھیں گے )

    ہم میں سے اکثر کمپیوٹر یوزرز نے کبھی نا کبھی تو یہ ضرور نوٹ کیا ہوگا کہ جب ونڈوز ایکس پی انسٹال کی جاتی ہے تو وہ بڑی فٹ چل رہی ہوتی ہے پر دن گزرنے کے ساتھ ساتھ اس کی رفتار میں کمی آ جاتی ہے ونڈوز پروگرام کو لوڈ کرنے میں اور خود لوڈ ہونے میں بھی ٹائم لے رہی ہوتی ہے ۔ ایسا ہونا ممکن ہے کیونکہ جب ونڈو سٹارٹ ہوتی ہے تو باری باری اپنے سسٹم پراسیسز کو پہلے چلاتی ہیں ۔ اور جیسے جیسے ونڈوز میں ہم نئے نئے پروگرام انسٹال کرتے جاتے ہیں ۔۔ ونڈو کا رجسٹر بھی بھاری ہوتا جاتا ہے ۔

    سسٹم پراسیسز

    اب یہ کیا ہونگے ؟ بہت سمپل ہے کہ ہمارا آپریٹنگ سسٹم کا کام ہمارے کمپیوٹر میں لگے ہر ہر ھارڈوئیر ( مثلا ۔۔ کی بورڈ ، ماوس ، مانیٹر ، سپیکر ، ساونڈ ، گرافک کارڈ ، ہرنٹر ، ہارڈ دسک ، ڈی وی ڈی سی ڈی روم ، و دیگر ) کو ان کے ڈرائیور پروگرام کی مد میں استعمال میں لانا ہوتا ہے ۔ یہ نہایت سادہ سا ونڈوز کا انٹروڈکشن ہے گر آپ اس کو سمجھگئے تو آپ تقریبا آپریٹنگ سسٹم کو سمجھ گئے ۔

    سو جب جب ونڈو سٹارٹ ہوتی ہے تو وہ باری باری تمام ڈرائیوز کو چلاتی ہے ۔۔ پھر وہ اس رجسٹری کو پڑھتی ہے جہاں وہ سافٹ وئیر درج ہیں جو آٹو میٹک ونڈو سٹارٹ ہونے پر چلنے چاہیے ( یہ سافٹ وئیر ہم خودی انسٹال کرتے ہیں اور زیادہ تر استعمال کنندہ کی مرضی جانے بہت سے سافٹ وئیر اپنے آپ خود کو آتو میٹک سٹارٹ ہوجانے کی رجسٹری میں انٹری درج کر دیتے ہیں مثلا ۔۔ یاہو مسنجر ، ایم ایس ان میسینجر ، ساونڈ کارڈ سافٹ وئیر وغیرہ وغیرہ )

    یہ تمام پروگرامز سافٹ وئیر ونڈو کے ساتھ ہی اس کے پراسیس ٹری میں سسٹم پراسیسز کی مد میں ریم موموری میں آکر چل رہے ہوتے ہیں ۔ ہم کو اپنا کنٹرول انہی پراسیسز پر رکھنا ہے ۔۔ کیونکہ بہت ضروری ہے کہ ہم وہی پروگرامز کو سسٹم پراسیسز میں آنے دیں جن کی ہم کو فل وقت ضرورت پڑ رہی ہو ۔۔ ضرورت نہیں تو پراسیس ٹری میں ان کی موجودگی ہمارے اپنے کمپیوٹر کنٹرول پر ایک سوالیہ نشان ہی ہوگی ۔ جیسے نوٹ کریں ۔۔ یاہو میسینجر ۔۔ ایم ایس این مسنجر ۔۔ ان کا آتومیٹک چلانے کی کیا ضرورت ؟ ان کو تب تب چلائیں جب جب ان کی ضرورت ہو ۔

    اپنے سسٹم پر ابھی فورا آپ ctrl + alt + delete یہ پریس کریں ۔۔ آپ کے سامنے ونڈوز دکھائے گی جو بتائے گی کہ ابھی آپ کی ریم میں کتنے کتنے پروگرام آ کر چل رہے ہیں

    [​IMG]

    ابھی آپ خود نوٹ کریں ۔۔ آپ کے پراسیس ایکسپلورر میں یہ سب وہ پروگرامز ہیں جو آپ کے کمپوٹر کی ریم موموری میں آکر یا تو چل رہے ہیں یا اپنی باری کا انتظار کر رہے ہیں ۔۔ میں آپ سے سادہ سوال کروگا ۔۔ کہ کیا آپ جانتے ہو یہ پوگرامز کون کون سے ہیں اور ان کا کام کیا ہے ؟

    سوال بہت ضروری ہے کیونکہ مجھے تو ایس آ کمپوٹر یوزز یہ پتا ہے کہ میرے کمپیوٹر میں اس وقت کون کون سے پروگرام چل رہے ہیں اور ان کا کیا کام ہے ۔۔ ( ایک ہیکنگ سافٹ وئیر جو آپ کو ہیک کرے گا وہ بھی اسی پراسیس ٹری میں آئے گا ) ۔۔

    میرے لیے یہ بات بہت ضروری ہے کہ میرے سسٹم پراسیسز میرے کنٹرول میں ہو ۔۔ میں اپنے کمپیوٹر میں ابھی تک کے تمام پروگرامز استعمال کرتا ہو ۔۔۔ گرافکس کیڈنگ سے لیکر ویب تک کے ۔۔ اور جب میرا کمپیوٹر چلتا ہے تب میرے سسٹم پراسیسز ٢٢ ہوتے ہیں ۔۔ اور جیسے جیسے مجھے جس پروگرام کی ضرورے پڑتی ہے اسے چلاتا ہو اور جب بند کرتا ہو تو یہ ضرور چیک کرتا ہو کہ وہ سسٹم پراسیس سے بھی غائیب ہوے ہو ۔

    سو ابھی آپ اپنے آپ کو اپنے سسٹم پراسیسز سے چاہے گوگل سرچ کرکے اوئیر کریں ۔۔ یا آپ مجھ سے پوچھ سکتے ہو ۔۔ بہت ضروری ہے کہ آپ پہلے یہ سمجھ لو کے آپ کا آپریٹنگ سسٹم آپ کے کتنے اختیار میں ہے ۔ ہر ایک پراسیس پروگرام کا نام پراسیس ٹری میں درج ہے ۔۔ آپ واہاں سے نوٹ کرو اور گوگل پر سرچ کرو ۔۔ گر آپ کے پراسیس ایکسپلورر میں کوئی نا معلوم عجیب غریب پراسیس چل رہا ہے ۔۔ تو بہت ممکن ہے کہ آپ کا آپریٹنگ سسٹم و آپ دونوں ہی کمپرومائیز ہوچکے ہو ( ہیکر ، سپیم ٹروجن ہورس ۔۔ ایڈ وئیر )

    ( sys interlas کے پراسیس ایکسپلورر کو میں تحریر کے ساتھ اٹیچ کر رہا ہو ۔۔ یہ ڈافالٹ پراسیس ایکسپلورر کا اپگریڈ ورژن ہے )

    سو یہ بہت ضروری ہے کہ آپ ہمیشہ انہی سافٹ وئیر پروگرامز کو اپنے کمپوٹر پراسیس ٹری میں آنے دیں جن کہ آپ کو ضرورت ہو ۔۔ نامعلوم ایسے پروگرامز جن کی آپ کو ضرورت نہیں تو انکا پراسیس ٹری میں ہونے کا کوئی فائدہ نہیں ۔

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 11
  2. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    شکریہ ریحان۔ ذرا احباب کو یہ بھی بتا دو کہ کونسے پراسیس ونڈوز ایکسپی کو چلانے کیلئے ضروری ہیں۔ تاکہ باقیوں کو ہم ڈس ایبل یا مینول پر کر دیں۔ نیز وسٹا کا بھی بتا دینا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    بہترین جناب اگلی پوسٹ کا انتظار رہے گا
     
  4. ریحان

    ریحان محفلین

    مراسلے:
    209
    تحریر کا دوسرا حصہ اٍسی بارے میں ہے ۔۔ مزید میں چاہوگا کہ پڑھنے والے سسٹم پراسیسزز کے بارے میں گوگل سرچ کو بھی آزمائیں ۔۔

    سس انٹیرنلس پراسیسنگ ٹری کے سروسز کیٹیگری میں درج پراسیس ونڈوز کے لیے ضروری ہیں ۔۔ اینٹی وائیرس مڈیول بھی وہی ہوتا ہے ۔۔ پر یاد رہے کہ اینٹی وائیرس بھی تب ضروری ہے جب وائیرس کا خطرہ لاحق ہو ۔
     
  5. نبیل

    نبیل محفلین

    مراسلے:
    16,743
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Depressed
    شکریہ ریحان۔ آپ بہت اہم موضوع پر معلومات فراہم کر رہے ہیں۔ کمپیوٹر یوزرز کی اکثریت (بشمول میرے) کو اپنے کمپیوٹر پر چلنے والے پروگرامز کے بارے میں‌ علم نہیں ہوتا ہے۔ نتیجتاً وہ اس بات کی وجہ بھی نہیں جان پاتے کہ ان کا پی سی کیوں اتنا سلو ہو رہا ہے۔ اس مضمون کے باقی حصوں کا انتظار رہے گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    204,770
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت اچھے جناب۔ بہت ہی اہم موضوع ہے۔ آپ کی مزید تحریر کا انتظار رہے گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. حسن نظامی

    حسن نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    564
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    لیکن تحریر کا یہ فونٹ کیوں رکھا گیا ہے ۔ اسے پڑھنا بہت مشکل ہے۔
     
  8. مطیع الرحمٰن

    مطیع الرحمٰن محفلین

    مراسلے:
    644
    بہت خوب ریحان بھائی
    مگر آپ کی پوسٹ کے الفاظ کا سائز بہت چھوٹا ہے ذرا اس کو بھی ٹھیک کرلیں
    جزاک اللہ
     
  9. ریحان

    ریحان محفلین

    مراسلے:
    209
    مطیع الرحمٰن بھائی و سب کا تحریر پسند کرنے پر شکریہ

    محفل پر یہ میری پہلی کمپیوٹنگ تحریر ہے ۔۔ مجھے محفل کے اردو ٹیکسٹ اڈیٹر میں ٹیکسٹ فارمیٹ ایڈجسمنٹ میں تھوڑی دشواری کا سامنا ہے ۔۔ ٹیکسٹ بڑا کرنے پر تحریر کا لے آوٹ خراب ہو جاتا ہے ۔۔ جبکہ لائیں ہائیٹ کی ایڈجسمنٹ میں بھی دشواری ہے ۔۔ امید ہے کہ اگلی تحریر تک اس دشواری کا کوئی حل نکل آئے گا ۔

    مزید مجھے بہت خوشی ہوگی گر آپ سب میری مدد و راہنمائی کریں کہ میں اپنی تحریر کو کیسے بہتر بناو ۔


     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. نبیل

    نبیل محفلین

    مراسلے:
    16,743
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Depressed
    مجھے آپ کی ایڈیٹر والی پرابلم کی سمجھ نہیں آئی۔ جہاں تک آپ کے مضمون میں بہتری لانے کا تعلق ہے تو کچھ اپنی املا کو بہتر بنانے کی کوشش کریں۔ علاوہ ازیں اگر انگریزی اصطلاحات کے اگر کوئی آسان فہم اردو متبادل دستیاب ہوں تو انہیں استعمال کرنےکی کوشش کریں۔ اس کے علاوہ اپنے مضمون میں حوالہ جات کے لیے روابط شامل کریں تو اس سے بھی آپ کے مضمون کی افادیت میں اضافہ ہوجائے گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. محمد سعد

    محمد سعد محفلین

    مراسلے:
    2,851
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bored
    کچھ مفت کے مشورے میں بھی لکھ دوں۔

    کسی بھی سافٹ وئیر کو سٹارٹ اپ میں چلنے سے روکنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ اگر اس کی سیٹنگز میں کوئی ایسا اختیار ہو تو اس کا استعمال کریں۔ کیونکہ اس سے غلطی سے ہونے والی کسی خرابی کا امکان کم ہو جاتا ہے۔ یاہو مسنجر، ایم ایس این مسنجر وغیرہ خود ہی بڑی شرافت کے ساتھ آپ کو یہ اختیار دے دیتے ہیں۔ ہاں اگر مطلابہ پروگرام خود شرافت کے ساتھ آپ کو یہ اختیار نہیں دیتا تو پھر تو ٹیڑھی انگلی سے گھی نکالنا ہی پڑے گا۔ ورنہ بیشتر معاملات میں اس کی سیٹنگز سے ہی یہ کام ہو جاتا ہے۔

    اس کے علاوہ میں نے دیکھا ہے کہ عموماً لوگ کسی پروگرام کو نصب کرنے کے بعد اسے اس کی ڈیفالٹ حالت میں ہی قبول کر لیتے ہیں۔ اپنی مرضی اور ضروریات کے مطابق ڈھالنے کی کوشش نہیں کرتے۔ جبکہ یہ کوئی ایسا مشکل کام نہیں ہے اور اس سے آپ کے وقت کی بھی بڑی بچت ہو جاتی ہے۔ چنانچہ جب بھی کوئی نیا پروگرام نصب کریں، تو اس کی سیٹنگز میں جا کر ضرور دیکھیں کہ اسے اپنی ضروریات اور سہالت کے لیے کس حد تک ڈھالا جا سکتا ہے۔ اس پر صرف چند منٹ صرف کر کے ہی آئیندہ کا بہت سا وقت بچایا جا سکتا ہے۔
     
  12. خورشیدآزاد

    خورشیدآزاد محفلین

    مراسلے:
    514
    جھنڈا:
    HongKong
    موڈ:
    Confused
    اس ربط پر پراسیس لائیبریری نامی ویب سائٹ ہے جو اس سلسلے میں انتہائی مدد گار ثابت ہوسکتی ہے-
     
  13. کاشف اختر

    کاشف اختر لائبریرین

    مراسلے:
    718
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Goofy
    زبردست معلومات فراہم کی ہیں ! شکریہ
     

اس صفحے کی تشہیر