اب گوگل آپریٹنگ سسٹم بھی

باسم نے 'لینکس کا ترجمہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 12, 2006

  1. باسم

    باسم محفلین

    مراسلے:
    1,767
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    مشہور انٹر نیٹ سرچ کمپنی گوگل جو کہ سرچ انجن سے لیکر آن لائن کمیونٹی تک اور نیوز سروس سے لیکر ای میل سروس تک اپنے حریفوں پر سبقت کی ایک لمبی فہرست رکھتی ہے اب آپریٹنگ سسٹم کے میدان میں بھی اترنے کا فیصلہ کر چکی ہے ۔

    گوگل نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ لینکس کے تیزی سے مشہور ہوتے آپریٹنگ سسٹم "اوبنٹو" "Ubuntu" کا الگ ورژن تیار کررہی ہے جسکی بنیاد Debian اور Gnome ڈیسک ٹاپ پر ہے اور اسکا کوڈ نام "گوبنٹو" "Goobuntu" بتایا گیا ہے۔

    اگر چہ اس کے بارے میں مزید تفصیلات اور بنانے کی وجہ بتانے سے گریز کیا گیا ہے مگر قیاس آرائیوں اور دعؤوں کا سلسلہ جاری ہے۔ کچھ کا کہنا ہے کہ ہو سکتا ہے یہ ایک کھلونا پرجیکٹ ہو جس سے گوگل کے ماہرین اپنے کام سے فارغ ہو کر تفریح کیلیے کھیلتے ہوں یہ تو ایک طنزیہ رائے تھی ۔ سنجیدہ آراء اس بارے میں دو طرح کی ہیں ایک تو یہ ہے کہ یہ آپریٹنگ سسٹم گوگل کے ذاتی اور دفتری استعمال کیلیے بنایا جا رہا ہے اور اس سے عام یوزرز کو براہ راست کوئی تعلق نہیں ہو گا جبکہ دوسری رائے یہ ہے کہ یہ آپریٹنگ سسٹم عام یوزرز کے استعمال کیلیے ونڈوز جو کہ گوگل کا اصل ٹارگٹ ہے کے مقابلے میں پیش کیا جانا ہے ۔

    اور اس دوسری رائےکو مزید پختگی اس بات سے حاصل ہوتی ہے کہ گوگل ایک تیز ترین سپر کمپیوٹر سسٹم بنارہا ہے یہاں سوال پیدا ہوتا ہے کہ جب گوگل کے پاس پہلے ہی سے ایسا سسٹم ہے جو اس کے بہترین سرچ انجن، ای میل سروس اور اسی طرح کی دوسری بہت سی سروسز کو سنبھال رہا ہے تو گوگل کو اس نئے سسٹم کا کیا کرنا ہے ؟ اور گوگل پہلے سے ہی لینکس کے مختلف آپریٹنگ سسٹم استعمال کررہا ہے تو اسے نیا آپریٹنگ سسٹم بنانے کی کیا پڑی ہے ؟

    اسی بنیاد پر بعض لوگوں کا کہنا ہے کہ گوگل گوبنٹو آپریٹنگ سسٹم اس لیے بنا رہا ہے کہ ایک طرف تو وہ اسکے اس سپر کمپیوٹر کو چلا سکے اور اسکے ساتھ ہی وہ گوبنٹو کا سادہ، مختصر اور تیز ترین یوزر ورژن بھی تیار کررہا ہے اور اس طرح وہ ایک ایسی سروس دینے جا رہا ہے جس میں کوئی بھی شخص Gmailکی طرح اپنا اکاؤنٹ بنا کر گوگل کے اس سپر کمپیوٹر تک آن لائن رسائی حاصل کرسکے گا اسکے مختلف سوفٹ ویئرز گوگل ڈوکس جسے کل ہی ریلیز کردیا گیا ہے اور یہ ایم ایس ورڈ اور پاور پوانٹ کے مقابلے میں ہے اسی طرح گوگل پیجز وغیرہ، اپنے ذاتی کمپیوٹر میں انسٹال کیے بغیر استعمال کرسکے گا اپنی جتنی بھی فائلز چاہے گا وہاں محفوظ کرسکے گا اور کسی بھی کمپیوٹر کے ذریعے اپنے اس آن لائن PC سے اپنی مطلوبہ فائلوں کو حاصل کرسکے گا اور سب سے بڑھ کر یہ کہ اس آپریٹنگ سسٹم کی قیمت یا تو بالکل نہیں ہو گی ۔ اسے انٹرنیٹ سے مفت ڈاؤن لوڈ کیا جا سکے گا اور اسکی سی ڈی مفت منگوائی جا سکے گی جیسا کہ اسکی اصل "اوبنٹو" کے آپریٹنگ سسٹم کی سی ڈیز مفت ارسال کی جا رہی ہیں یا پھر اسکی قیمت انتہائی کم ہوگی توقع کی جا رہی ہے کہ ونڈوز کی 200 ڈالر(تقریباً12000 روپے) کی اوریجنل کاپی کے مقابلے میں اسکی قیمت صرف 10 ڈالر(تقریباً600روپے) فی کاپی ہوگی ۔

    اگر واقعی ایسا ہونے والا ہے تو پھر ونڈوز کی ضرورت کسے رہے گی اور یقیناً ہر کوئی "گوبنٹو" ہی استعمال کرے گا ۔

    یہاں ایک اور بات قابل ذکر ہے کہ Goobuntu.com کا ڈومین اس وقت گوگل کے پاس نہیں ہے بلکہ کسی اور کمپنی نے اسے خرید لیا ہے تو ہوسکتا ہے کہ اپنے اس آپریٹنگ سسٹم کا نام گوگل کو بدلنا پڑ جائے ویسے بھی ابھی یہ کوڈ نام ہے جو بدل ہی دیا جاتا ہے اور اس سلسلے میں جو دوسرا نام سامنے آرہا ہے وہ "گوس" GooOS ہے اور اگر ہم gooos.com یا gooos.org پر جائیں تو ہیں یہ پیغام ملتا ہے کہ اس سرور تک آپ کی رسائی ممکن نہیں ہے جس سے لگتا ہے کہ یہ ڈومین گوگل نے لے لیا ہے۔

    بہر حال" گوبنٹو" ہو یا "گوس" اس آپریٹنگ سسٹم کو ونڈوز کے مقابلے میں آسان، تیز ترین، کامیاب بنانے اور ونڈوز کی برتری ختم کرنے کیلیے گوگل کے ماہرین کو بہت محنت کرنی ہوگی اور اس کیلیے انہیں کافی وقت درکار ہوگا اور ہم یوزرز کو اس وقت تک انتظار کرنا ہوگا اور اس انتظار کی مدت کا اندازہ تقریباً ایک سال لگایا جا رہا ہے ۔

    باسممجھے اسکی تصاویر یہاں بھیجنی نہیں آرہی ہیں کوی بتاے کیا کروں؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. پاکستانی

    پاکستانی محفلین

    مراسلے:
    4,529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بہت خوب یعنی مائیکروسافٹ اور گوگل کی چل سو چل شروع ہونے والی ہے۔

    باسم صاحب یہ ایک ہی تحریر کو 3 بار پوسٹ کرنے کی وجہ سمجھ نہیں آئی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. باسم

    باسم محفلین

    مراسلے:
    1,767
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    اب ٹھیک ہے

    چل سو چل تو کیا لگتا ہے ایم ایس کی چھٹی ہونے والی ہے۔
    اور میں نے تصویر لگانے کی کوشش کی تو پورا مضمون دوبارہ آنے لگا اب ٹھیک کردیا ہے لیکن تصاویر نہیں لگ سکیں مجھ سے نیا ہوں نا کچھ مدد کیجیے۔ :?
     
  4. دوست

    دوست محفلین

    مراسلے:
    13,072
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Fine
    واہ جی واہ کیا خبر سنائی ہے۔
     
  5. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    بہت خوب باسم

    تصویر لگانے کے لیے آپ کسی بھی فری امیج ہوسٹنگ سائٹ پر جا کر تصویر کو اپ لوڈ کریں اور پھر اس کا لنک اپنی پوسٹ میں دے دیں
     
  6. باسم

    باسم محفلین

    مراسلے:
    1,767
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    تصاویر کے روابط

    [​IMG]

    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. دوست

    دوست محفلین

    مراسلے:
    13,072
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Fine
    اچھی چیز لگ رہی ہے یہ گوگل او ایس بھی۔ اگر آجائے مارکیٹ میں تو پھر اوبنٹو کو کون پوچھے گا۔
     
  8. نبیل

    نبیل محفلین

    مراسلے:
    16,743
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Depressed
    باسم تصاویر پوسٹ کرنے کا شکریہ۔ میں نے ان پر img ٹیگ لگا دیا ہے جس سے یہ اب ٹھیک نظر آ رہی ہیں۔ ٹیگ لگانے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ پہلے تصویر کے ربط کو ہائی لائٹ کریں، پھر اوپر امیج کمانڈ بٹن [​IMG] پریس کریں۔ اس طرح صحیح ٹیگ لگ جائے گا۔
     
  9. پاکستانی

    پاکستانی محفلین

    مراسلے:
    4,529
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    اچھی بات ہے
     
  10. میم نون

    میم نون محفلین

    مراسلے:
    4,801
    جھنڈا:
    Italy
    موڈ:
    Daring
    رنگوں کے اعلاوہ (جو کہ مجھے کچھ حاص نہیں لگے( ڈیزائن بہت اچھا ہے اسکا۔

    اگر یہ واقعی ہی میں مارکیٹ میں آجائے تو م س کی تو پکی چھٹی، اور بنسبت م س کے (بات ہی نا کیجئے( گوگل تو ویسے بھی مشہور ہے آسان، اعلی میار اور تیزترین سروس مہیا کرنے میں۔

    والسلام، نوید
     
  11. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    اوبنتو کے مقابلے یا کبنتو کے مقابلے یہ انٹرفیس تو کچھ بھی نہیں لگ رہا :(
     
  12. باسم

    باسم محفلین

    مراسلے:
    1,767
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    گوگل نے بات پکی کردی (آفیشل بلاگ(
    گوگل جلد ہی اپنا کمپیوٹر آپریٹنگ سسٹم متعارف کرائے گا
    کیلیفورنیا…گوگل جلد ہی اپنا کمپیوٹر آپریٹنگ سسٹم متعارف کرائے گا جس سے کمپیوٹر کی سب بڑی کمپنی مائیکرو سوفٹ کو سخت مقابلے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔گوگل نے اس کمپیوٹر آپریٹنگ سسٹم کا نام کورم تجویز کیا ہے اور اس کو اگلے سال متعارف کرادیا جائے گا اس سسٹم سے دنیا میں سب سے زیادہ استعمال ہونے والا مائیکرو سوفٹ کے آپریٹنگ سسٹم ونڈو کو سخت مقابلے کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ سوفٹ ویئر کی صنعت جس تیزی سے جدید سسٹم ویب ٹو او کی طرف جارہی ہے اس میں ونڈو کی افادیت کم ہوتی جارہی ہے جبکہ دوسری جانب گوگل کا سسٹم کافی آسان اور جدید تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے بنایا گیا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 7
  13. ابن سعید

    ابن سعید خادم

    مراسلے:
    60,165
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  14. راسخ کشمیری

    راسخ کشمیری محفلین

    مراسلے:
    854
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    گوس گوگل کے پاس نہیں
    اور نہ ہی اورگ والا اس کے پاس ہے۔
    http://who.is/whois/gooos.com/
    جبکہ گوبنٹو بھی گوگل کا نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    چلو اسی بہانے مائکروسافٹ کے مکھی مار سافٹ وئیر انجینیرز کوئی ڈھنگ کا کام تو کریں گے نا!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  16. حبیب علی

    حبیب علی محفلین

    مراسلے:
    14
    اچھی معلومات دی آپ نے۔ بہت شکریہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر