آرٹ فلموں پر تبصرے

زبیر مرزا نے 'سنیما، ٹی وی اور تھیٹر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 7, 2012

  1. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    السلام علیکم
    متوازی فلمیں یا آرٹ فلمیں بامقصد وبامعنی سینما کی ایک صنف ہیں جن میں سماجی، معاشی اور
    نفسیاتی مسائل کو پیش کیا جاتا ہے ان میں فلم بینوں کے لیے تفریحی عناصر تو موجود نہیں ہوتے
    مگر پرفارمنگ آرٹ( اداکاری) کا حُسن ضرورشامل ہوتا ہے- حقیقت سے قریب ترین اور بناء کسی
    تام جھام کے یہ فلمیں دنیا بھر میں دیکھی اور سراہی جاتی ہیں محفل کے کچھ ارکان ان سنجیدہ
    موضوعات پر بننے والی فلموں پر سیرحاصل تبصرہ کرنے اور ان کے بارے میں معلومات کا
    بیش بہا خزانہ رکھتے ہیں اس لیے اس دھاگے کو شروع کررہا ہوں-​
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 3
  2. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    انجمن
    یہ فلم مظفرعلی نے لکھنؤ کی چکن کا کپڑاتیار کرنے والی محنت کش خواتین کے حالات و مسائل کے بارے میں بنائی
    لکھنؤ کی تہذیب، روایات اور سفید پوش طبقے کی جانفشانی کو مظفر علی نے جزئیات کے ساتھ پیش کیا اور اس ماحول میں
    معمولی اجراءت پر دن بھر چکن کا کپڑا کاڑھنے والی مزدور خواتین کی تاجران کی جانب سے کی جانے والی
    حق تلفی پر آواز بلند کی گئی- شبانہ اعظمی اور فاروق شیخ نے مرکزی کردار ادا کیے- شبانہ اعظمی سے بڑھ کر
    کون اس تمام حساسیت کو پیش کرسکتا تھا لہذا وہ اپنی اداکاری کے جوہر دکھا کر اس کہانی کو مزید جان دار بنا دیتی ہیں
    اس فلم کی ایک خاص بات اس میں شبانہ اعظمی کی گلوکاری بھی ہے - شبانہ نے خود کو اچھی گائیکہ بھی ثابت کیا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  3. محمد امین

    محمد امین لائبریرین

    مراسلے:
    9,454
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Flirty
    یورپ کی آرٹ فلمیں غالباً زیادہ مشہور ہیں خاص کر ترکی، ہے نا؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    ایرانی فلمیں جو اپنے موضوعات کے باعث کافی شہرت رکھتی ہیں - ہالی وڈ کی فلمیں جو اینڈیپینڈٹ فلم میکر بناتے ہیں اور چھوٹے بجٹ کی ہوتی ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  5. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    [​IMG]
    رابرٹ ریڈفورڈ( اداکار) کی ہدایت میں بننے والی پہلی فلم تھی - ایک خاندان کی کہانی جن کا بڑابیٹا ایک حادثے میں مرجاتا ہے
    اور چھوٹا بیٹا اس حادثے کا خود کو ذمے دار تصور کرتا ہے اوراحساس جرم میں مبتالا ہوکر خودکشی کی کوشش کرتا ہے تو اس کے والد اسے ایک ماہرنفسیات کے پاس لےجاتے ہیں-
    اس فلم میں تھراپیسٹ اور کلائینٹ کے رشتے کو جس انداز میں بیاں کیا گیا ہے بے حد متاثرکُن ہے - اداکاری لاجواب- مکالمے جاندار
    اور جذبات سے بھرپور ایک لڑکے کی جذباتی کشمکش آپ کی آنکھیں نم کردے گی - یہ بہترین فلم کا اکیڈمی ایوارڈ حاصل کرنے کا اعزاز
    حاصل کرچکی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  6. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    Rashid Ashraf آپ کے سیرحاصل تبصرے کا انتظار ہے
     
  7. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    جناب والا! سب سے پہلے تو مبارکباد کہ آپ نے اس دھاگے کو شروع کیا۔
    اس سے قبل میں نے کئی اہم نام آپ کے سامنے پیش کیے تھے۔ اس گفتگو میں رہ جانے والا ایک نام ششی کپور کی فلم "ان کسٹڈی" کا بھی ہے۔ ان کسٹڈی، اردو کے ایک شاعر کی کہانی ہے جو تاریک الدنیا ہو کر گمنامی کی زندگی بسر کررہا تھا کہ اسی اثناء میں ایک قدردان (اوم پوری) اس تک پہنچتا ہے اور کوشش کرتا ہے کہ اس سے ملاقات کرکے عہد گم گشتہ کو پھر سے زندہ کردے۔
    کمال کی فلم ہے، کمال کی اداکاری ہے، اردو زبان کی صحت کے کیا کہنے۔ کراچی میں یہ فلم خوش قسمتی سے کلفٹن میں واقع ایک دکان کے مالک نے ہندوستان سے منگوائی اور ہمیں ہمارے ہرکاروں نے اس بات کی اطلاع بہم پہنائی، منزل پر پہنچے، اسے خریدا، ٹک شاد ہوئے اور چل نکلے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  8. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    گزشتہ پوسٹ میں انتہائی مطلوبہ فلموں میں سرفہرست نام سعید اختر مرزا کی "اروند ڈیسائی کی عجیب داستان" کا لکھا تھا۔ خوش قسمتی تو دیکھیے کہ حال ہی میں، محض چند روز قبل ہی ہندوستان کے ایک ادارے نے چند فلمیں انٹرنیٹ پر شامل کی ہیں۔ ان میں یہ فلم بھی موجود ہے۔ جلد ہی آپ کو تمام فلموں کے لنکس بھیج دوں گا۔ 5 برس کی تلاش مکمل ہوئی۔ "تھوڑا سا رومانی ہوجائیں" بھی مل گئی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    چند مزید لاجواب فلموں کے نام یہ ہیں:
    اس رات کی صبح نہیں
    وہ چھوکری
    بمبئی بوائز
    وجیتا
    جنون
    36 چورنگی لین
    باتوں باتوں میں
    رجنی گندھا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    عموما یہ سمجھا جاتا ہے کہ اسی کی دہائی کے بعد آرٹ فملوں کا دور ختم ہوگیا لیکن ایسا نہیں ہے۔ آج بھی ایسی فلمیں بن رہی ہیں جو خالصتا آرٹ فلم ہی کے زمرے میں آتی ہیں۔ ایک ایسی حیرت انگیز فلم کا ذکر کروں گا جس کو دیکھنے سے کردار نگاری، منظر نامے اور اداکاری کی صلاحتیوں پر اش اش کرنا لازمی ہوجاتا ہے۔ یہ
    AMAL
    ہے۔ انگریزی اور اردو (ہندی) میں بنی ہے۔ 2007 میں نمائش کے لیے پیش کی گئی، ہندی کہنا اس لیے بھی غیر مناسب ہوگا کہ اس میں خالص ارو ہی بولی گئی ہے اور شین قاف کا خاص خیال رکھا گیا ہے جو دلی والوں کا خاصہ ہے۔ یہ فلم ضرور دیکھیے! اس فلم میں نصیر الدین شاہ کے علاوہ روشن سیٹھ ہیں۔ باقی اداکاری کہنے کو غیر معروف لیکن اداکاری دیکھنے سے تعلق رکھتی ہے!
    دلی ہی میں فلمائی گئی ایک اور فلم "مون سون ویڈنگ" بھی ہے۔ یہ بھی آرٹ فلم ہے۔ تعریف الفاظ میں ممکن نہیں۔
    کھوسلہ کا گھونسلہ اور بھیجا فرائی کو بھی میں خالصتا آرٹ فلموں ہی کے زمرے میں رکھنا پسند کروں گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  11. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    اگر آپ نے ایک معیاری فلم دیکھنی ہے تو
    East is East
    اوم پوری کی یہ فلم انگریزی زبان میں ہے۔ گزشتہ برس دس سال کے وقفے کے بعد اس کا دوسرا حصہ بھی بنا تھا، اس کا نام
    West is West
    موخر الذکر میں پاکستان کا لوگ گلوکار سائیں ظہور بھی نظر آتا ہے۔ خاکسار کا یہ مضمون ملاحظہ ہو:
    http://www.hamariweb.com/articles/article.aspx?id=14682
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  12. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    مرچ مصالحہ، نصیر الدین شاہ، اوم پوری کی فلم ہے۔ اسی کی دہائی میں بنی اس آرٹ فلم میں نصیر ایک جاگیردار ہے اور اس کی عملداری میں مرچیں کوٹنے و پیسنے والی غریب عورتیں بھی ہیں جن میں ایک (سمیتا پاٹل) پر وہ بری نظر رکھتا ہے۔ اوم پوری ایک مسلمان چوکیدار ہے۔ یہ ایک خوبصورت فلم ہے جس میں فلم بنانے والا اپنی بات موثر انداز میں فلم بینوں تک پہنچانے میں کامیاب رہا ہے۔ غریب عورتیں اپنی حفاظت کی خاطر یکجا ہوجاتی ہیں اور اس موقع پر فلم میں کئی یادگار مناظر دیکھنے میں آتے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  13. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    نصیر الدین شاہ اور شبانہ اعظمی کی ایک یادگار فلم "پار" ہے۔ کلکتہ کے پس منظر میں بنی اس فلم میں پسے ہوئے طبقے کی جدوجہد اور اس دوران گزرنے والے مصائب و آلام کو جابکدستی سے پیش کیا گیا ہے۔ کلکتہ ایک بڑا شہر اور یہ دونوں گاؤں سے بھاگے ہوئے ۔ فلم کا آخری منظر دلدوز ہے، دیکھنے والے کا دل اس وقت پارہ پارہ ہوجاتا ہے جب چند ٹکوں کی خاطر دونوں میاں بیوی کو سوروں کے ایک ریوڑ کو دریا پار پہنچانے کا کام ملتا ہے۔ کام اتنا آسان بھی نہیں ہوتا لیکن دیکھنے والوں کے لیے اس وقت تو یہ قیامت کے برابر ہی ہوجاتا ہے جب انہیں یہ علم ہوتا ہے کہ نصیر الدین شاہ کی بیوی حاملہ ہے۔ گوتم گوش کی اس فلم کو ہندوستانی آرٹ فلموں کی تاریخ کی ایک بڑی فلم مانا جاتا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  14. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    مرچ مسالہ کی ڈی- وی-ڈی میرے پاس ہے :) اس فلم کی ایک خصوصیت اس میں (نصیرالدین شاہ کی ساس) دینا پاٹھک(بیوی) رتنا اور(سالی)سپریا
    کا ایک فلم میں یکجا ہونا بھی ہے- یہ تینوں غضب کی با صلاحیت اداکارائیں ہیں- رتنا نے کم فلموں میں کام کیا مگرجو کیا لاجواب
    نصیرالدین شاہ نے ایک فلم کی ہدایت کاری بھی کی تھی( جو یوں ہوتا تو) بڑی منفرد فلم تھی جس میں کونکونا سین شرما- رتنا اور جمی شیرگل نے
    عمدہ اداکاری کی - کہانی میں جدت تھی ، مناظر اور ڈائیلاگ کمال کے ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  15. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    مرچ مسالہ کی فوٹو گرافی مرچوں کے اسٹاک کے مناظر میں انتہائی معیاری ہے۔جس طرح فلم' ارد ستیہ' میں انسپکٹر (اوم پوری ) کا ملزم کا پہاڑی جھاڑیوں میں بلندی سے نیچے آتے ہوئے تعاقب کرنے کا منظر ابھی تک یاد ہے۔

    راشد اشرف صاحب نےانتہائی عمدہ فلموں کے نام تحریر کئے ہیں جن میں سے صرف چند ہی دیکھنے کا موقع ملا ہے۔ اور بقیہ دیکھنے کی ہوس ہے۔
    ان میں شبانہ اعظمی کی 'نشانت' اور 'آکروش' کا اضافہ کر لیں۔ راشد صاحب خوش قسمت ہیں کہ ان کے رابطے ہر میدان میں اصحاب ذوق کے ساتھ ہیں اور اچھی چیزیں ہمیشہ ان کی دسترس میں رہی ہیں۔ ان سے گزارش ہے کہ ہم شائقین کو بھی شریک کر لیا کریں مثلاً انٹرنیٹ کے روابط کے ذریعے ۔ اورانہیں زحمت تو ہوگی، تاہم ،اگروہ کراچی کی ایک آدھ ایسی آؤٹ لیٹ کا پتہ تحریر کر دیں جہاں سے ایسی اردو آرٹ فلمیں دستیاب ہوں اس طرح ہم جیسے دوسرے شہروں میں رہنے والوں کے لئےان کو منگوانے میں آسانی ہو جائے گی۔ کیونکہ یہ حقیقت ہے کہ ہر جگہ ایسی شاہکار فلمیں کم ہی دستیاب ہوتی ہیں۔فضولیات کی بھر مار ہے۔

    آخر میں ، مرزا صاحب کے لئے تحسین و تشکر، جنہیں یہ عمدہ دھاگہ شروع کرنے کا خیال آیا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  16. حسیب نذیر گِل

    حسیب نذیر گِل محفلین

    مراسلے:
    7,241
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    زبردست۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  17. حسیب نذیر گِل

    حسیب نذیر گِل محفلین

    مراسلے:
    7,241
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Innocent
    کچھ ہالی وڈ فلموں کا بھی ذکر کریں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. زبیر مرزا

    زبیر مرزا محفلین

    مراسلے:
    5,997
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    جی جناب ایک فلم پرتبصرہ کرچکا ہوں اور مزید پر بھی بات ہوگی
    Ordinary People

    http://www.imdb.com/title/tt0081283/
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    بہت شکریہ بھائی تلمیذ!
    نشانت اور آکروش کے نام سہوا رہ گئے تھے، یہ دونوں فلمیں تو نہایت عمدہ ہیں۔ بھومیکا بھی اسی دور کی فلم ہے۔ ایک فلم دودھ والوں پر بنی تھی، "منتھن" اس کا نام ہے۔
    بھائی تلمیذ!
    حیققت تو یہ ہے کہ کراچی کے رینبو سینٹر میں دستیاب چند عمدہ ہندوستانی آرٹ فملوں کی دستیابی کا "ذمہ دار" یہ خاکسار ہے۔ ڈیمانڈ پیدا کرنے کے سلسلے میں خوب کام کیا، نتیجا یہ ہوا کہ وی ایچ ایس پرنٹ ہی سہی، کچھ نایاب فلمیں دستیاب ہوہی گئیں۔ رینبو سینٹر سے تمام شہروں میں فلمیں جاتی ہیں، امریکہ کی "ہٹ لسٹ" میں یہ جگہ کافی عرے سے ہے کہ انہیں کاپی رائٹ کی مد میں کروڑوں ڈالر کا تقصان اٹھانا پڑتا ہے۔ امریکی قونصل خانے کی درخؤاست پر دو برس قبل ایک آپریشن بھی یہاں ہوا تھا۔
    ایک دکاندار ایسا ہے جس کے پاس سے آرٹ فملیں ارزاں قیمت پر دستیاب ہیں، یہ وہی ہے جس نے میرے کہنے پر
    genesis
    اور دیگر تقریبا 10 فلموں کو ڈی وی ڈی کے قالب میں بدقت تمام کہیں سے ڈھونڈ کر ڈھالا تھا، جینسس (نصیر الدین شاہ، اوم پوری، شبانہ اعظمی) کا پرنٹ اچھا نہیں ہے لیکن فلم عمدہ ہے۔
    غالبا یہاں لنکس درج کرنے کی ممانعت ہے ؟ میں آپ کو زحال صاحب چند ایسے لنکس بھیجوں گا جنہیں دیکھ کر آپ خود حیران رہ جائیں گے، یوں سمجھ لیجیے کہ 5 برس کی تلاش حال ہی میں بارآور ثابت ہوئی ہے اور آپ لوگ انتظار کے اس کرب سے بچ جائیں گے جس میں میں مبتلا رہا ہوں۔ کچھ وقت دیجیے، چند دن!
    ایسا ہے کہ ادبی مضامین، کتابوں پر تبصرے اور کتابوں (بالخصوص خودنوشتوں) کی کھوج کے باعث اس جانب ایک برس سے توجہ کچھ کم ہوگئی تھی، سچ یہ ہے کہ اب تقریبا تمام قابل ذکر آرٹ فملیں حاصل کرچکا ہوں۔ ابن صفی پر کتاب لکھنے میں دو مہینے تو کسی چیز کا ہوش نہ رہا تھا، اب وہ بھی شائع ہوچکی ہے، سواب لنکس کو مجتمع کرتا ہوں۔
     
    • زبردست زبردست × 4
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  20. Rashid Ashraf

    Rashid Ashraf محفلین

    مراسلے:
    355
    بھائی تلمیذ!
    آخروش ایک بے رحم فلم ہے۔ ہندوستان میں اچھوتوں پر کیا گزرتی ہے، اس کو نہایت عمدہ طریقے سے دکھایا گیا ہے۔
    ایک فلم نانا پاٹیکر کی ہے۔ اس کا ذکر نہیں ہوا۔ یہ " انکش" ہے۔ ممبئی کے چار بے روزگار جوانوں پر۔
    خاموش فلم "پشپک" میں کمل ہاسن کی اداکاری لاجواب ہے۔ فلم میں ایک ڈائلاگ بھی نہیں لیکن مجال ہے کہ اسے درمیان سے چھوڑ کر اٹھ جائے کوئی!
    کمل ہاسن ہی کی ایک فلم "صدمہ" ہے۔ مشہور ہے، آپ یقیننا واقف ہوں گے۔ دل دہل کر رہ جاتا ہے آخری منظر میں!
    زحال مرزا!
    گلزار کی "کتاب" بھی آپ میرے توسط سے جلد ہی دیکھ پائیں گے۔ آپ نے کہا تھا کہ آپ اس سے ناواقف ہیں۔
     
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر