آج کی حدیث

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ` رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ”ابوہریرہ! علم فرائض سیکھو اور سکھاؤ، اس لیے کہ وہ علم کا آدھا حصہ ہے، وہ بھلا دیا جائے گا، اور سب سے پہلے یہی علم میری امت سے اٹھایا جائے گا“۔
(سنن ابن ماجہ۔ باب نمبر24۔حدیث نمبر2719)
سیما آپا ، آپ نے ایک اہم حدیث نقل کی ہے ۔ بیشتر لوگوں کو علم الفرائض کی اصطلاح کے درست معنی نہیں معلوم ہوتے اور اکثربتانا پڑتے ہیں اورعلم الفرائض پر عمل تو اب پاکستانی معاشرے میں برائے نام ہی رہ گیا ہے ۔
 

سیما علی

لائبریرین
قالَ ﷺ: کفر اور ایمان کے درمیان فرق کرنے والی چیز "نماز" کا ترک کرنا ہے!
‏ترمذی 2618

‏قالَ ﷺ: بیشک آدمی اور شرک و کفر کے درمیان (فاصلہ مٹانےوالا عمل)
"نماز" کا ترک کرنا ہے!
‏مسلم 246؛ ترمذی 2620؛ ابوداؤد 4678
 

سیما علی

لائبریرین
اللہ کےرسولٰ(صل اللہ علیہ وسلم ) نے فرمایا:اللہ پاک تمھاری
‏توبہ سے اتنا خوش ہوتا ہے جیسے کوئ اپنی گمشدہ
‏چیز کے ملنے سے خوش ہوتاہے. ]ابن ماجہ، جلد:2

‏حدیث:2051[
 

سیما علی

لائبریرین
انس بن مالک ؓ نے بیان کیا:
‏آپﷺ (بسا اوقات) ایک کلمہ (اہم بات) تین بار دہراتے تھے تاکہ اسے اچھی طرح سمجھ لیا جائے
‏ترمذی 3640 (بخاری 95؛ ابوداؤد 3653)
 

سیما علی

لائبریرین
سیما آپا ، آپ نے ایک اہم حدیث نقل کی ہے ۔ بیشتر لوگوں کو علم الفرائض کی اصطلاح کے درست معنی نہیں معلوم ہوتے اور اکثربتانا پڑتے ہیں اورعلم الفرائض پر عمل تو اب پاکستانی معاشرے میں برائے نام ہی رہ گیا ہے ۔
بھیا بالکل درست کہا آپ نے
معنی ہم یہاں لکھ دیتے ہیں تاکہ آسانی رہے ؀
فَرَائِضُ [عام][اسم] واحد: فریضۃ ) وراثت کی شرعی تقسیم کے اصول وضوابط کا علم، علم المیراث،
اصحاب فرائض !!!!مقررہ حصوں والے۔اس سے مرادوہ لوگ ہیں جن کا میراث میں معیّن حصہ قرآن وحدیث میں بیان کردیاگیاہے۔۔۔
 
Top