1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

محمداحمد کے کوائف نامے کے مراسلے پر تبصرے

  1. عرفان سعید
    عرفان سعید
    عدت گزرنے کا انتظار تو نہیں کر رہے۔ (محفل کو طلاق دیکر)

    محفل تو انہیں نہ چھوڑنے پر بضد تھی۔ کہیں خلع کا حکم نامہ نہ لے آئے ہوں!
    ‏ستمبر 1, 2018
    محمداحمد نے اسے پسند کیا۔
  2. محمداحمد
    محمداحمد
    عدت گزرنے کا انتظار تو وہ کرتے ہیں جو نیا بیاہ رچانا چاہ رہے ہوتے ہیں۔ :) :)

    ویسے مجھے یہ لگتا ہے کہ اب دو چار دن میں وارث بھائی ناراضگی بھلا دیں گے۔

    یوں بھی کافی دن ہو گئے ہیں۔
    ‏ستمبر 1, 2018
    لاریب مرزا اور عرفان سعید نے اسے پسند کیا۔
  3. عرفان سعید
    عرفان سعید
    کچھ پتا تو چلے کس موئے کمبخت نے انہیں ناراض کیا، پھر اسے کان سے پکڑ کر حاضر کردیں گے۔
    ‏ستمبر 1, 2018
    محمد وارث نے اسے پسند کیا۔
  4. لاریب مرزا
    لاریب مرزا
    وارث بھائی کے لیے بہت سی دعائیں۔ اللہ تعالیٰ انہیں خوش رکھے۔ :)
    ‏ستمبر 1, 2018
    محمد وارث، عبید انصاری اور عرفان سعید نے اسے پسند کیا۔
  5. عبید انصاری
    عبید انصاری
    سچ کہیں تو زیادہ احتجاج کرتے ہوئے بھی ڈر لگتا ہے کہ مبادا غصہ نہ کر جائیں۔ :)
    ‏ستمبر 1, 2018
    محمد وارث اور لاریب مرزا نے اسے پسند کیا۔
  6. لاریب مرزا
    لاریب مرزا
    عبید انصاری ہم بھی احتجاج کرنے لگیں تو روز محفل میں دھرنا دیں۔ :پ
    لیکن دوسروں کو ان کی سہولت کے مطابق اسپیس دینی چاہیے۔ :)
    ‏ستمبر 1, 2018
    فرقان احمد، عبید انصاری اور محمد وارث نے اسے پسند کیا۔
  7. محمد وارث
    محمد وارث
    آپ سب دوستوں کی یاد آوری، خیر خواہی اور کلماتِ خیر کے لیے ممنون ہوں۔ نہ کوئی ناراضی ہے نہ کوئی شوخی، بس یہیں ہوں لیکن عجب سی یاسیت ہے اور خاموش رہنے کی تمنا۔ خیر دیکھتے ہیں کب تلک۔ :)
    ‏ستمبر 1, 2018
    فرقان احمد، محمداحمد، اے خان اور 5 دیگر اراکین نے اسے پسند کیا۔
  8. عرفان سعید
    عرفان سعید
    ہماری نیک تمنائیں آپ کے ساتھ ہیں محمد وارث بھائی!
    ‏ستمبر 1, 2018
    فرقان احمد، لاریب مرزا اور محمد وارث نے اسے پسند کیا۔
  9. محمداحمد
    محمداحمد
    ہم انتظار کریں گے تیرا قیامت تک
    خدا کرے کہ قیامت ہو اور تو آئے

    گیت کے بول یاد آگئے تو ازراہِ تفنن لکھ دیے۔

    مختصر یہ ہے کہ جب آپ کا دل چاہے تب کلام کیجے، ہم سمیت کئی ایک لوگ دیدہ و دل فرشِ راہ کیے منتظر ہیں۔
    ‏ستمبر 3, 2018