سید رافع

کوائف نامے کے مراسلے حالیہ سرگرمی مراسلے تعارف

  • مسجد میں قرآن پڑھیں تو سامنے صف والے کی پشت، الٹا منہ کر کے پڑھیں تو کعبے کو پشت، دائیں بائیں ہو کر پڑھیں تو آگے والے کی تشریف کا رخ۔ بھائی اعمال کا درومدار نیتوں پر ہے۔ اچھی نیت کے ساتھ نماز و تلاوت کرنے دیں۔
    وہ مرد نہیں جو ڈر جائے ماحول کے خونی منظر سے
    اس حال میں جینا لازم ہے جس حال میں جینا مشکل ہے
    2035 تک، اسرائیل کے ہاتھوں ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد بہت زیادہ ہو جائے گی۔ یہ 2035 تک ایک مستقل گوشت کاٹنے والی مشین بن جائے گا۔
    سید رافع
    سید رافع
    پانی اور خوراک کی قلت عام ہو جائے گی اور جھوٹ کے بجائے قتل کرنا نیا معمول بن جائے گا۔ دنیا بھر میں بیماریاں اور قحط عام ہوں گے۔
    سید رافع
    سید رافع
    مکہ، مدینہ، کربلا اور تمام مقدس مقامات کبھی نہ پہلے اس طرح اجاڑ ہو ئے ہوں گے۔ وہاں رہنے کے لیے بہت زیادہ صبر کی ضرورت ہوگی۔ کچھ اچھے مرد اور خواتین اپنے بچوں کے ساتھ ان مقدس مقامات کی طرف ہجرت کریں گے اور اپنے ایمان کو بچانے کے لیے مصائب کا سامنا کریں گے۔
    سید رافع
    سید رافع
    ملالہ یوسف زئی پاکستان کی وزیر اعظم بن جائیں گی۔

    واللہ اعلم۔
    ملحد متوجہ کرتے ہیں کہ آپ اللہ کا تذکرہ نا کریں یہ تفرقہ ہے۔
    عیسائی متوجہ کرتے ہیں کہ آپ محمد کا تذکرہ نا کریں یہ تفرقہ ہے۔
    مسلمان متوجہ کرتے ہیں کہ آپ آل محمد کا تذکرہ نا کریں یہ تفرقہ ہے۔

    جو اللہ، محمد اور آل محمد سے جدا ہو وہ اصل میں تفرقہ ہے۔ وہ جدائی ہے محبت، خلوص ،ادب اور علم سے۔
    سید رافع
    سید رافع
    وہی جو عیسائی کہتے ہیں
    سید رافع
    سید رافع
    ایسی جنگ نہیں ہو گی کیونکہ فرنگ کی رگِ جاں پنجۂ یَہود میں ہے۔اور مسلمانوں کے لیے اس میں کچھ فائدہ نہیں۔ البتہ آرمیگاڈون یا ملحمۃ العظمی عیسائی فرقوں کے درمیان ہو گی۔
    آل محمد ﷺ پر ہر دو رکعت بعد درود ابراھیمی کی محبت نچھاور کرنے والوں، ان پر سلام کی مالا جَپْنے والوں کو جب آل محمد ﷺ آکر ہدایت دیں تو وہ اسے چورن اور منجن کہہ کر مٹا ڈالتے ہیں۔ یوں ہی سابقہ انبیاء علیہ السلام دن دھاڑے قتل ہوئے۔ پھر وہ قوم بھی نجات نا پا سکی۔
    علی وقار
    علی وقار
    شکریہ۔
    ضمنی سوال: اگر آل محمد ﷺ کی رائے منقسم ہو تو؟ کئی اجتماعی مسائل کے حوالے سے ایسا اکثر دیکھنے میں آتا ہے تو کس کی رائے صائب ہو گی؟
    سید رافع
    سید رافع
    دونوں کی۔
    علی وقار
    علی وقار
    اس جواب کے بعد، کافی سوالات ذہن میں پیدا ہوئے۔ کیفیت نامہ ان سوالات کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ چلیں، پھر کبھی سہی۔ :)
    جب کہ چیٹ جی پی ٹی 5 ہمارے لیے جلد ہی ریلیز ہونے والا ہے، دفاعی محکمہ شاید پہلے ہی جی پی ٹی 50 تک رسائی حاصل کر چکا ہے اور تمام سوشل میڈیا بشمول واٹس ایپ، فیس بک، لنکڈ ان وغیرہ، اربوں انٹرنیٹ بیسڈ سسٹمز، ڈارک ویب سائٹس، کسی بھی کلاؤڈ سرورز پر ...
    سید رافع
    سید رافع
    موجود ذاتی ڈیٹا بشمول AWS، ایژور، گوگل کلاؤڈ وغیرہ، اربوں اینڈرائیڈ اور iOS ڈیوائسز پر موجود ذاتی ڈیٹا، کوئی بھی دستاویز، تصویر، ویڈیو یا کوئی بھی فائل جو کسی بھی سرور پر موجود ہو جو لینکس، ونڈوز یا میک آپریٹنگ سسٹمز چلا رہا ہو اور کوئی بھی آئی او ٹی ڈیوائس، ڈیجیٹل گیجٹ یا نگرانی کرنے والا ڈیوائس جو وائی فائی یا انٹرنیٹ سے منسلک ہو۔
    سید رافع
    سید رافع
    اے آئی ماڈلز بالکل مستقبل کی سیاست، مذاہب، فصلیں، معیشت اور فوج کی پیش گوئی کر سکتے ہیں۔

    غزہ کی طرح، سیاست، مذاہب، فصلیں، معیشت اور فوج کو مکمل طور پر ختم کیا جانا چاہیے اگر ون ورلڈ اے آئی ریڈ سگنل جاری کرے۔

    ون ورلڈ گورنمنٹ کے لیے تیار ہو جائیں۔
    قبل اسکے کہ لفنگے کے ہتھیار آپکے بچے تک پہنچیں، اپنے رشتے داروں، دوستوں، پڑوسیوں، آفس کولیگز میں ہر ایک لفنگے کا زبان اور لکھتے ہاتھوں سے محاصرہ کریں۔

    دنیا کے تمام لفنگے ایک قوم اور انکے مخالف ایک قوم۔
    کمپنی پھیل رہی ہو تو کام کرنے اور ترقی کے بے شمار مواقع ہوتے ہیں۔ اسلام سکڑ رہا ہے، کام اور پھر ترقی کے مواقع محدود ہیں۔
    آپ سمجھ رہیں ہوں کہ شاید آجکل کے دور میں ایٹم بمب، ایک طویل آرمی یا دیگر ہتھیار چاہیئں ہیں لوگوں کے قلوب کو فتح کرنے کے لیے۔ نہیں ہرگز نہیں۔ یہ لفنگوں کے ہتھیار ہیں۔

    آپ کے منہ میں موجود آپکی زبان اور آپ کے لکھتے ہاتھ ایٹم بمب ہیں۔ موجودہ دور میں یہ ایٹم بمب لاکھوں ایٹم بمز کے سوئچ آف کر سکتا ہے اور اربوں انسانوں کے دل مسخر کر سکتا ہے۔

    لفنگوں کے ہتھیاروں کے ہرگز درپے نا ہوں۔
    شاعر احمد فرہاد، اسے اٹھا لو فیم، اب مسنگ پرسن۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کا فوراً پیش کرنے کا آرڈر۔
    طالبان یا داعش ہونا ایک کیفیت ہے جو کسی بھی کم عقل مرد و عورت پر طاری ہو سکتی ہے چاہے وہ مرد و عورت ایران و پاکستان کےہوں یا لندن و نیویارک کےیا شیعہ ہوں، سنی ہوں یہودی ہوں یا ہندو۔
    حج پر فلسطین کے لیے سعودی بادشاہ کو برا کہنا جیل کا باعث بن سکتا ہے۔
    سید رافع
    سید رافع
    سعودی بادشاہ کا اسرائیل سے تعلقات قائم کرنااس کو برا کہنے کی کئی وجوہات میں سے ایک ہے۔
    زیک
    زیک
    سعودی بادشاہ کو تو آپ کبھی بھی برا نہیں کہہ سکتے یہ کوئی نئی بات تو نہیں۔
    سید رافع
    سید رافع
    اصل میں لندن میں پلی بڑھی لڑکیاں گرفتار ہوئی ہیں۔ لندن، سڈنی اور ٹورنٹو کا ماحول کچھ اور ہے۔ احتیاط کریں
  • لوڈ ہو رہا ہے…
  • لوڈ ہو رہا ہے…
  • لوڈ ہو رہا ہے…
Top