1. گوگل کروم کے حالیہ نسخہ 53 میں محفل کا اردو ایڈیٹر بعض مقامات پر درست کام نہیں کر رہا۔ جب تک اس کا کوئی حل نہ دریافت کر لیا جائے، احباب گوگل کروم کے پچھلے نسخوں یا دیگر کسی براؤزر کا استعمال کر سکتے ہیں۔ اس بلائے نا گہانی سے ہم کافی پریشان ہیں اور جلدی ہی اس کا کوئی حل دریافت کرنے کی کوشش جاری ہے۔ تفصیل ملاحظہ فرمائیں!

    اعلان ختم کریں

بچوں کے لئے سیل فون

زیک نے 'روز مرہ کے معمولات سے' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 21, 2014

  1. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    آپ کے خیال میں بچوں کو کس عمر میں سیل فون لے کر دینا چاہیئے؟

    کیا بچے کو سمارٹ فون دیا جائے یا دوسرا؟

    بچے پر فون کے استعمال پر کیا پابندیاں مناسب ہیں؟

    بچے کو فون کے کیا فائدے اور نقصانات ہیں؟

    ایک پیرنٹ کی حیثیت سے آپ کے اس موضوع پر کیا خیالات اور محسوسات ہیں؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 6
    • زبردست زبردست × 4
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  2. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    4,412
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    سب احباب سے رائے زنی کی درخواست کی جاتی ہے۔تاکہ یہ دھاگا مفید ثابت ہو۔
     
    • متفق متفق × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  3. صائمہ شاہ

    صائمہ شاہ محفلین

    مراسلے:
    4,434
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Cool
    میرے خیال میں ٹین ایجرز کے پاس سمارٹ فونز نہیں ہونے چاہیئں کیونکہ آپ کچھ بھی ٹریک نہیں کر سکتے بہت سے ایپس فری ہیں سوشل نیٹ ورکنگ کے لئے
    یہاں مقصد یہ نہیں کہ آپ بچوں کی جاسوسی کریں مگر بچوں کی سیکیورٹی کے لئے یہ سب بہت اہم ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • متفق متفق × 2
  4. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    7,642
    موڈ:
    Cheerful
    کسی میجک نمبر کا تعین تو مشکل ہے لیکن میرے خیال میں بچوں کو ہائی سکول میں سیل فون کی واقعی ضرورت ہوتی ہے۔ لہذا کم از کم نہم یا دہم جماعت کے بچوں کے پاس سیل فون ضرور ہونا چاہیے۔

    فون وہ دیا جائے جو اس کے اکثر و بیشتر ہم جماعت کے پاس ہوں۔ بچے کو وہ پرکشش لگے۔ بہت آؤٹ آف ڈیٹ ماڈل نہ ہو۔

    ایسی پابندیاں عموماً مفید ثابت نہیں ہوتی۔ اس سے بہتر ہے کہ بچے کو ایجوکیٹ کیا جائے اور اسے اپنے اعتماد میں رکھا جائے۔ زیادہ سے زیادہ اس بات کا چیک رکھیں کہ وہ کون کون سی ایپ ڈاؤن لوڈ کرتا ہے۔

    گھر سے مستقل رابطہ ، سکول سے نیٹ ورکنگ، امتحانات، اسائنمنٹس۔۔۔ غرض ہر مقصد کے لیے کار آمد ہے۔
    نقصان میں صرف یہی ہے کہ بچے کو Addiction نہ ہو جائے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
    • زبردست زبردست × 1
  5. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    میرا بھی ارادہ ہے کہ رائے دوں مگر ابھی دوسروں کے تجربات و خیالات سننا چاہتا ہوں اور کچھ مصروف بھی ہوں۔
     
    • متفق متفق × 1
  6. محمدصابر

    محمدصابر محفلین

    مراسلے:
    7,054
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    میرا بھی سوال شامل کر لیں۔ کہ سمارٹ فون استعمال کرتے ہوئے عموما بچوں میں غلطی کرنے کا احتمال کتنے فیصد ہوتا ہے؟ یہ سوال ،زیادہ تر امریکی سکولوں کے بچوں کے آپس میں ہونے والے تصویری پیغامات (ان کا شاید ایک خاص نام بھی ہے)اور اس کے نتیجے میں ،خودکشیوں یا شدید ڈپریشن کے پس منظر میں کیا گیا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    بچے کو کس عمر میں سیل فون دیا جائے اس کا تعین میرے خیال میں بچے کا ماحول اور آپ کی جیب کرتی ہے۔

    اگر آپ فون اور سروس آسانی سے افورڈ نہیں کر سکتے تو ظاہر ہے بچے کو فون نہیں دیا جائے

    اگر بچے کے تمام دوستوں کے پاس سیل فون ہے تو اپنے بچے کو روکنا زیادتی ہو سکتی ہے۔

    میرے خیال میں ہائی سکول (نویں سے بارہویں جماعت) میں فون ہونا چاہیئے اور ایلیمنٹری (پہلی سے پانچویں) میں نہیں ہونا چاہیئے۔
     
  8. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    16,060
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    اینڈرائڈ میں کڈز کے لاگ ان بن سکتے ہیں۔ جس میں ان تمام ایپس کا تعین ممکن ہے جو بچہ استعمال کرے یا نہ کرے۔ تو میرا خیال ہے کہ یہاں والدین کا کردار زیادہ اہم ہو جاتا ہے کہ ان کو خود بھی ٹیکنالوجی کے مناسب استعمال کا پتا ہو۔

    تدوین: آئی فون والے شاید اس سہولت سے فائدہ نہ اٹھا پائیں۔۔۔ :p
     
    آخری تدوین: ‏ستمبر 22, 2014
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  9. نیرنگ خیال

    نیرنگ خیال لائبریرین

    مراسلے:
    16,060
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    یہ دونوں سوال ایک دوسرے سے متعلق ہیں۔ پہلے تو اپنی جیب کو دیکھا جائے۔ اور اس کے بعد بچہ جس اسکول یا معاشرے میں اٹھتا بیٹھتا ہے اس کے تقاضوں کو مد نظر رکھنا پڑے گا۔ دوم سمارٹ فونز سے پہلے بچے کی ان خطوط پر تربیت ضروری ہے کہ وہ چند بنیادی قوانین سے بخوبی واقف ہو۔

    بالکل مناسب ہیں۔ اور موبائل فون کے علاوہ بھی ہونی چاہیے۔ شتربےمہار رویہ بچوں کے لیے نقصان کا سبب ہو سکتا ہے۔ موبائل فونز میں کڈز لاگ-ان اور ونڈوز میں تو ونڈو سیون سے یہ سہولت موجود ہے۔ کہ آپ بچوں کی انٹرنیٹ اور موبائل کی تفریحات پر نظر بھی رکھ سکیں اور انہیں کنڑول بھی کر سکیں۔ لیکن اس کے لیے والدین کا بھی متعلقہ موضوع پر علم ہونا ضروری ہے۔

    یہ تو بہت وسیع موضوع ہے۔ فوائد میں پڑھائی، موضوعات اور آئی کیو لیول کے کھیل آسکتے ہیں۔ اور نقصانات کی فہرست بھی طویل ہی ہے۔

    میرے بچے تو ابھی چھوٹے ہیں۔ مستقبل میں بچوں کو اس موضوع پر باقاعدہ علم دینے کا ارادہ رکھتا ہوں۔ تاکہ وہ اس کے فوائد سے بہرہ مند ہو نہ کہ نقصانات میں الجھ کر اپنا وقت برباد کریں۔ ظاہر ہے کہ یہ ایسی چیز ہے جو جلد یا بدیر بچوں کی ضرورت بنے گی ہی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. امجد میانداد

    امجد میانداد محفلین

    مراسلے:
    4,843
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dead
    میرا خیال ہے بچوں کو موبائل فون نہ دینا غلطی ہو گی۔
    ان کی ضرورت بننے سے پہلے ہی شروع شروع میں بچوں کو اس طرح عادی بنایا جائے کے وہ گیمز اور مختلف ایپس کے لیے آپ کا فون استعمال کرتے رہیں، پھر رابطوں کے لیے بھی آپ ہی سے فون لے کر استعمال کریں۔ اس طرح ایک تو آپ کو ان کے رجحان کا اندازہ ہو جائے گا۔ اور اس سلسلے میں بچے کی پسند نا پسند کا بھی۔ اور جب ان کی ضرورت کا وقت آئے تو آپ کافی حد تک کئی چیزوں سے مطمئن ہو چکے ہوں۔
    بچے اپنے دوستوں اور آس پاس والوں کے پاس موجود چیزوں سے متاثر ہوتے ہیں یا تو آپ ان جیسا فون لے کر دیں یا ایسا منفرد کہ بچہ اسے دکھاتے ہوئے اچھا محسوس کرے۔
    میں نہیں جانتا کہ پابندی ٹھیک رہے گی وہ پابندی کہ ہم بچوں سے کہیں کہ آپ نے یہ چیز ہر گز استعمال نہیں کرنی تو ایسے میں چھپ کر یا ہمارے علم میں لائے بغیر استعمال کرنے کا رجحان بڑھ سکتا ہے۔ اس میں سب سے بہتر طریقہ یہ ہے کہ جس طرح ہم دوسری چیزوں کے بارے میں بچوں کو آگاہی دیتے ہیں اسی طرح موبائل کے استعمال اور اچھائیوں اور برائیوں سے بچوں کو احسن طریقے سے آگاہ کیا جائے۔ میں نے دیکھا ہے کہ بچے جب کسی چیز کے لیے اشتیاق رکھتے ہیں اور آپ بغیر کسی جھنجھٹ کے ان کی امیدوں پر پورا اتر جاتے ہیں تو ایسے میں بچے بھی کوشش کرتے ہیں کہ وہ سامنے اور پیٹھ پیچھے ہر جگہ والدین کی امیدوں پر پورا اترنے کی کوشش کریں۔
    عین ممکن ہے کہ ہمارا بچہ موبائل یا کمپیوٹر کا غلط استعمال نہ چاہتا ہو یا نا کرتا ہو لیکن اس کے دوستوں میں کچھ دوست ایسے ہوں یا وہ ریگولرلی دوسروں کو کمپیوٹر یا موبائل کا غلط استعمال کرتا دیکھے اور متجسس ہو۔
    ایسے میں ہمارا کردار یہ ہونا چاہیے کہ ہمارے بچے ہم سے اس قدر عادی ہوں چیزیں شئیر کرنے کے اور شئیر کرنے پر ان کی حوصلہ افزائی ہونی چاہیے بھلے ہی وہ اپنی غلطی شئیر کر رہے ہوں۔ تو ضرور وہ ایسا جب بھی دیکھیں گے کچھ نیا یا غلط تو وہ ہم سے ضرور شئیر کریں گے کہ فلاں ایسا ہے اور فلاں ویسا ہے یا ایسا کر رہا تھا ویسا کرتا ہے وغیرہ وغیرہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  11. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    7,642
    موڈ:
    Cheerful
    آئی فون بچوں کا کھیل نہیں۔۔۔ :p
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  12. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    یہاں ہمارے جاننے والے بچوں میں اکثر کے پاس سمارٹ فون ہیں۔ بہت سے والدین ان کے لئے سیل فون پلان نہیں لیتے لہذا وہ وائی فائی پر چلتے ہیں۔ جب بچے کچھ بڑے ہو جاتے ہیں تو ان کو فون پلان بھی لے دیتے ہیں
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  13. arifkarim

    arifkarim محفلین

    مراسلے:
    29,068
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    اگر بچہ "سمارٹ" ہے تو دینا چاہئے نہیں تو نہیں دینا چاہئے :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  14. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    بیٹی کو فون دیئے اب تیسرا سال ہے۔ فون اس کے لئے فائدہ مند رہا ہے اور اس سے بیٹی نے کافی کچھ سیکھا ہے۔

    پابندیوں کے سلسلے میں وقت کے ساتھ ساتھ تبدیلیاں آتی رہتی ہیں۔ کبھی کچھ پابندیاں لگاتے ہیں اور کبھی بیٹی کو سمجھانے پر اکتفا کرتے ہیں۔

    نظر رکھنے اور پرائیویسی دینے میں بھی تناسب رکھنا وقت کے ساتھ ہی سیکھا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  15. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    7,642
    موڈ:
    Cheerful
    یعنی آپ نے غالباً مڈل سکول سے ابتدا کروائی ہے۔ درست ہے۔
    پہلے میری رائے ہائی سکول سے شروع کروانے کے حق میں تھی۔ تاہم اب میرے خیال میں پرائمری سکول میں بھی گنجائش دی جا سکتی ہے۔ اگر پرائمری کا بچہ والدین کی زیرنگرانی نیٹ اور ویڈیوگیمز استعمال کرسکتا ہے تو سیل فون سے باز رکھنا مناسب نہیں۔
     
    • متفق متفق × 1
  16. زیک

    زیک محفلین

    مراسلے:
    25,544
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Drunk
    پرائمری میں سکول میں فون کی اجازت نہیں ہوتی اور باہر بھی کم ہی جانا ہوتا ہے والدین کے بغیر۔ مڈل سکول میں ہر بچے کے پاس فون ہے۔ سکول میں پڑھائی کے لئے بھی استعمال ہوتا ہے۔ بچے آپس میں ٹیکسٹ بھی کرتے ہیں۔ پھر سمارٹ فون بچوں کے جی پی ایس بیکن کے طور بھی استعمال کیا جا سکتا ہے کہ والدین یہ چیک کر سکیں کہ بچہ اس وقت کہاں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. arifkarim

    arifkarim محفلین

    مراسلے:
    29,068
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    ناروے میں پرائمری میں بھی موبائل فون لیکر دے سکتے ہیں البتہ کلاس روم میں استعمال کی اجازت نہیں ہے۔ اگر کوئی نکال لے تو ٹیچر رکھ لیتے ہیں اور پھر دن کے اختتام پر دیتے ہیں۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  18. یاز

    یاز محفلین

    مراسلے:
    6,151
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Confused
    دسویں جماعت سے پہلے تک صرف 3310 دینا چاہئے، تا کہ بچے شوقیہ دکھاوے سے (مجبوراً) گریز کریں اور صرف اشد ضرورت کے وقت استعمال کریں۔
    [​IMG]
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر